بجٹ میں پیپلزپارٹی نے نوسالہ روایت برقراررکھی،خرم شیر زمان

بجٹ میں پیپلزپارٹی نے نوسالہ روایت برقراررکھی،خرم شیر زمان

کراچی(اسٹاف رپورٹر)پاکستان تحریک انصاف کے رہنما و رکن سندھ اسمبلی خرم شیرزمان نے کہا ہے کہ بجٹ 2017۔2018 میں پیپلزپارٹی نے نوسالہ روایت برقراررکھی ہے۔ اس بجٹ میں عام لوگوں کے لئے کچھ بھی نہیں ہے کیونکہ پیپلزپارٹی جاگیردارطبقے کی نمائندگی کرتی ہے۔ کراچی سمیت سندھ بھر کے نوجوان تعلیم حاصل کرنے کے بعد ملازمتیں نہ ملنے پر مایوس ہوکر بیرون ملک جارہے ہیں جس کی زمہ دار پیپلزپارٹی کی حکومت ہے جو نو سال سے میرٹ کا گلہ گھونٹ کر نوکریاں فروخت کررہی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز سندھ اسمبلی میں 2017۔2018 کے بجٹ پر بحث میں حصہ لیتے ہوئے کیا۔تحریک انصاف کے رکن نے کہا کہ موجودہ حکومت کی نوسالہ دور میں کراچی میں صرف چار سڑکیں بنائی گئی ہیں اور 70 فیصد ریونیو دینے والے شہر کے لئے 12 روپے بجٹ میں مختص کرنا یہاں کے لوگوں کی توہین ہے۔ انہوں نے کہا کہ پی پی حکومت نوڈیرو249سیہون اور بھٹو کے مزار کے قریب کا پانی ٹیسٹنگ کے لیے بھیج دیاگر ان علاقوں کا پانی پینے کے قابل ہوا تو میں سیاست چھوڑ دونگا۔پی ٹی آئی رہنما نے کہا کہ پی پی حکومت طویل عرصہ سے سندھ میں حکمرانی کررہی ہے لیکن عوام کو پینے کا صاف پانی نہیں دے سکی۔خرم شیرزمان نے کہا کہ سندھ کے عوام اب باشعور ہیں اور 2018 کے انتخابات میں ان سب کو مسترد کردینگے جنہوں نے صوبے کے وسائل کو دونوں ہاتھوں سے لوٹا اور جب سندھ میں پاکستان تحریک انصاف کی حکومت بنے گی تو جن جن لوگوں کی شوگر ملز اور زمینیں زبردستی چھینی گئی ہیں وہ واپس دلائیں گے اور یہ یوم احتساب جلد آنے والا ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...