پاکستان اور انگلینڈ کے سیمی فائنل کیلئے ایمپائرز کا اعلان ہو گیا، ایک ایمپائر ایسا کہ پاکستانی اہم ترین میچ سے پہلے ہی شدید پریشان ہو گئے کیونکہ۔۔۔

پاکستان اور انگلینڈ کے سیمی فائنل کیلئے ایمپائرز کا اعلان ہو گیا، ایک ...
پاکستان اور انگلینڈ کے سیمی فائنل کیلئے ایمپائرز کا اعلان ہو گیا، ایک ایمپائر ایسا کہ پاکستانی اہم ترین میچ سے پہلے ہی شدید پریشان ہو گئے کیونکہ۔۔۔

  


کارڈیف (ڈیلی پاکستان آن لائن) انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے چیمپینز ٹرافی کے سیمی فائنل مقابلوں کیلئے میچ آفیشلز اور ایمپائروں کا اعلان کر دیا ہے۔ پاکستان اور انگلینڈ کے سیمی فائنل کیلئے جن ایمپائروں کے نام کا اعلان کیا گیا ہے ان میں سے ایک ایمپائر کے بارے میں جان کر پاکستانی تشویش میں مبتلا ہو گئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔ آج کے میچ میں بارش ہو گئی تو کون سی ٹیم فائنل میں جائے گی؟ ایسی خبر آگئی کہ ہر پاکستانی نے دعا شروع کر دی کہ بارش۔۔۔

آئی سی سی کے مطابق پاکستان اور انگلینڈ کے میچ کے دوران مارائس راسموس اور روڈ ٹکر میدان میں ایمپائرنگ کریں گے جبکہ کرس جیفنی تھرڈ ایمپائر ہوں گے۔ اس میچ میں بروس اوزینفورڈ چوتھے ایمپائر کے فرائض سرانجام دیں گے جبکہ اینڈی پائی کرافٹ میچ ریفری ہوں گے۔

تشویشناک امر یہ ہے کہ گراﺅنڈ میں ایمپائرنگ کے فرائض سرانجام دینے والے روڈ ٹکر نے 2016ءمیں انگلینڈ اور سری لنکا کے درمیان کھیلے گئے میچ میں غلط فیصلہ دیتے ہوئے سری لنکن باﺅلر کی گیند کو نو بال قرار دیدیا تھا اور اس طرح سری لنکن ٹیم وکٹ سے محروم رہ گئی تھی۔ اس ایک غلط فیصلے کے باعث انگلینڈ ہارتا ہوا میچ جیتنے کی پوزیشن میں آ گئی تھی اور سری لنکن ٹیم نے اس پر شدید احتجاج بھی کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔ ”بینچ پر بیٹھے اس کھلاڑی کو مت بھولنا۔۔۔“ انگلینڈ کیخلاف میچ سے پہلے وقار یونس بھی میدان میں آ گئے، ایسے کھلاڑی کی طرف توجہ دلا دی جسے پورا پاکستان کھیلتے دیکھنا چاہتا ہے، یہ کون ہے؟ جان کر آپ بھی حمایت کریں گے

اسی طرح 2015ءکے ورلڈکپ میں بنگلہ دیش اور بھارت کے میچ کے دوران بھی انہوں نے متعدد غلط فیصلے دئیے تھے جس کے باعث وہ متنازعہ ہو گئے۔ اس میچ میں مشفیق الرحیم نے شیکھر دھون کا وکٹ کے پیچھے کیچ چھوڑ دیا تھا لیکن اس کے باوجود روڈ ٹکر نے انہیں آﺅٹ قرار دیدیا تھا۔

پاکستانی بھی اس اسی تشویش میں مبتلا ہیں کہ اس اہم ترین میچ میں روڈ ٹکر کا کوئی بھی غلط فیصلہ میچ کا پانسہ پلٹ سکتا ہے اور اگر ان کا کوئی فیصلہ پاکستانی ٹیم پر اثرانداز ہوا تو پھر کیا کریں گے۔

مزید : کھیل


loading...