جے آئی ٹی کو اتنی سہولیات کیوں دی جا رہی ہیں ، وزیر اعظم کی ویڈیوسوشل میڈیا پر آگئی تو کون ذمہ دار ہو گا : وکیل حسین نواز

جے آئی ٹی کو اتنی سہولیات کیوں دی جا رہی ہیں ، وزیر اعظم کی ویڈیوسوشل میڈیا پر ...
جے آئی ٹی کو اتنی سہولیات کیوں دی جا رہی ہیں ، وزیر اعظم کی ویڈیوسوشل میڈیا پر آگئی تو کون ذمہ دار ہو گا : وکیل حسین نواز

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن ) حسین نواز کی تصویر لیک معاملے کی سماعت سپریم کورٹ میں جاری ہے جہاں انکے وکیل خواجہ حارث نے عدالت سے استدعا کی ہے کہ جے آئی ٹی کو ویڈیو ریکارڈنگ سے روکا جائے۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق جے آئی ٹی میں پیشی کے دوران وزیر اعظم کے صاحبزادے حسین نواز کی تصویر لیک ہونے کی درخواست کی سماعت جسٹس اعجاز افضل کی سربراہی میں قائم سپریم کورٹ کا تین رکنی بینچ کر رہا ہے ۔ سپریم کورٹ کے سامنے حسین نواز کے وکیل خواجہ حارث نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ جے آئی ٹی کو اتنی سہولیات کیوں دی جا رہی ہیں ، عدالت جے آئی ٹی کو ویڈیو ریکارڈنگ سے روکے ۔اگر وزیر اعظم کی ویڈیو سوشل میڈیا پرآ گئی تو کون ذمہ دار ہو گا ۔

انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کی ویڈیو ریکارڈنگ بھی لیک ہو سکتی ہے ، حسین نواز کی تصویر لیک ہونے کے معاملے کی تحقیقات کیلئے کمیشن بنایا جا ئے ۔سپریم کورٹ نے کہا کہ ویڈیو ریکارڈنگ سے کوئی حقوق متاثر نہیں ہو رہے ، جے آئی ٹی کی رپورٹ پبلک کرنے کا فیصلہ اٹارنی جنرل پر چھوڑ دیا ہے۔

مزید : قومی


loading...