گرین فیل ٹاور آتشزدگی ،رمضان المبارک کی سحری کے لئے بیدار ہونے والے مسلمانوں نے پڑوسیوں کی جانیں بچا کر امت کا سر فخر سے بلند کردیا

گرین فیل ٹاور آتشزدگی ،رمضان المبارک کی سحری کے لئے بیدار ہونے والے مسلمانوں ...
گرین فیل ٹاور آتشزدگی ،رمضان المبارک کی سحری کے لئے بیدار ہونے والے مسلمانوں نے پڑوسیوں کی جانیں بچا کر امت کا سر فخر سے بلند کردیا

  


لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن) گرین فیل ٹاور میں آتشزدگی کے بعد اپنے پڑوسیوں کی جان بچانے والے تمام افراد مسلمان تھے جو آتشزدگی کے وقت سحری کے لئے بیدار ہوئے تھے، انہوں نے اپنے آگ لگنے کے بعدا پنی پڑوسیوں کے دروازوں کی گھنٹیاں بجائیں اور انہیں بحفاظت نکالنے کے لئے رہنمائی بھی کی، جب کہ جن لوگوں کے فلیٹ اس آتشزدگی کی لپیٹ میں آئے ان کے لئے مساجد کو کھول دیا گیا اور انہیں کھانے پینے کی اشیاءدی گئیں ، کئی مسلمانوں نے اپنی جانوں پر کھیل کر اپنے غیر ملکی پڑوسیوں کی جانیں بچائیں۔

پاکستان نے انگلش ٹیم کو انگلینڈ کی سر زمین پر چاروں شانے چت کر دیا, قومی ٹیم فائنل میں پہنچ گئی ،ملک بھر میں جشن

برطانوی چینل سکائی نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے گرین ٹاور کی رہائشی راشدہ کا کہنا تھا کہ آتشزدگی کے وقت کئی مسلمان سحری کے لئے بیدار ہوا تھے، مسلمان نماز تراویح کے بعد سوتے بھی نہیں اس لئے کئی افراد کی جانیں اسی وجہ سے بچائی جا سکیں۔مسلمان مرد و خواتین ریسیکیو کی گاڑیوں اور ایمبولینسز کی آوازیں سن کر باہر نکلے تو انہیں آگ کے شعلے دکھائی دئیے انہوں نے فوری طور پر لوگوں کو اٹھانا شروع کردیا او راپنی جانوں پر کھیل کر آگ کے شعلوں میں گھری ہوئی فیملیز کو باہر نکالا اور انہیں محفوظ مقام پر منتقل کیا گیا۔

واضح رہے کہ گرین ٹاور آتشزدگی میں عمارت کا ایک حصہ جل گیا تھا جبکہ 10سے زائد افراد ہلاک ہوئے تھے۔

مزید : برطانیہ /اہم خبریں


loading...