روسی صدر پیوٹن نے روسی خواتین کو شرمناک حرکتوں کی کھلی چھٹی دیدی ، اب وہ دل کھول کر ۔۔۔

روسی صدر پیوٹن نے روسی خواتین کو شرمناک حرکتوں کی کھلی چھٹی دیدی ، اب وہ دل ...
روسی صدر پیوٹن نے روسی خواتین کو شرمناک حرکتوں کی کھلی چھٹی دیدی ، اب وہ دل کھول کر ۔۔۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

ماسکو(ڈیلی پاکستان آن لائن )روسی پارلیمانی کمیٹی کے سربراہ کی جانب سے روسی خواتین کو خبردار کیا گیا تھا کہ وہ فیفا ورلڈ دیکھنے آنے والوں کے ساتھ جسمانی تعلقات قائم نہ کریں تاہم اب اس معاملے پر روسی صدر پیوٹن بھی میدان میں آ گئے اور انہوں نے اس بیان کی تردید کرتے ہوئے خواتین کو کھلی چھٹی دیدی ہے کہ چاہیں تو فیفا ورلڈ کپ دیکھنے آنے والے غیر ملکیوں کے ساتھ جسمانی تعلق قائم کر سکتی ہیں ۔

غیر ملکی ویب سائٹ ’ڈیلی میل آن لائن‘ کے مطابق روسی صدر پیوٹن کے ترجمان ڈومیتری پیسکوو نے رپورٹرز سے گفتگو کرتے ہوئے آگاہ کیا کہ ’روسی خواتین پر ہے اور یہ فیصلہ ان کا ہوگا کہ انہوں نے جسمانی تعلقات قائم کرنے ہیں یا نہیں ، روسی خواتین دنیا کی سب سے بہترین اور خوبصورت خواتین ہیں ۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز روسی پارلیمانی کمیٹی کے سربراہ نے روسی شہریوں کو خبردار کرتے ہوئے کہاہے کہ فیفا ورلڈ کپ دیکھنے آنے والے غیر ملکیوں کے ساتھ جسمانی تعلقات قائم نہ کریں۔تمارا پلاٹینوا نے ریڈیو سٹیشن پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کا کام کرنے سنگل پیرنٹ فیملی بننے کا خدشہ بڑھ جاتاہے۔ انہوں نے کہا کہ ورلڈ کپ کے دوران کچھ لڑکیاں کچھ مردوں سے ملیں گی اور پھر وہ بچوں کو جنم دیں گی اور ہو بھی سکتاہے کہ وہ شادی کر لیں اور ہوسکتاہے کہ نہ کریں ، یہ صورتحال بچوں کیلئے نقصان دہ ہو گی جیسا کہ 1980 میں ہونی والی اولمپک گیمز میں ہوا تھا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /بین الاقوامی