نجی پٹرولیم کمپنیوں کے سی ای اوز کی عدم پیشی،ایف آئی اے کمیٹی کا لئنسنس منسوخی پر غور

  نجی پٹرولیم کمپنیوں کے سی ای اوز کی عدم پیشی،ایف آئی اے کمیٹی کا لئنسنس ...

  

کراچی(این این آئی) پیٹرولیم مصنوعات کی ذخیرہ اندازی اور بلیک مارکیٹنگ کے معاملے پر ایف آئی اے کی دوبارہ طلبی کے باوجود تین نجی پیٹرولیم کمپنیوں کے سی ای اوزگزشتہ روزبھی پیش نہ ہوئے۔ تینوں سی ای اوز کی جانب سے ان کے نمائندے پیش ہوئے اور حکام کو بتایا کہ دو تیل کمپنیوں کے سی ای اوز لاہور جبکہ ایک اسلام آباد میں ہیں۔ایف آئی اے حکام نے کہا ہے کہ دوبارہ طلبی کے باوجود پیش نہ ہونے پر ٹھوس قانونی کارروائی متوقع ہے اور وزارت پیٹرولیم کی جانب سے بنائی گئی کمیٹی کا لائسنس کی منسوخی سمیت مختلف امکانات پر غور کیا جارہا ہے۔ذرائع کے مطابق مزید 7 تیل کمپنیوں کے سی ای اوز کو طلب کیا گیا ہے اور ان تمام کمپنیوں پر تیل کی ذخیرہ اندوزی اور بلیک مارکیٹنگ کا الزام ہے۔ایف آئی اے حکام نے نوٹس میں تمام سی ای اوز کو سٹیٹ بینکنگ سرکل طلب کیا ہے اور تمام کو ضروری ریکارڈز ہمراہ لانے کا حکم دیا گیا ہے، تمام سی ای اوز کو بالترتیب 15، 16 اور 17 جون کو پیش ہونے کا حکم دیا گیا ہے۔

عدم پیشی/غور

مزید :

صفحہ آخر -