بھارت کی کنٹرول لائن پر فائرنگ،خاتون جاں بحق، 3افراد زخمی

  بھارت کی کنٹرول لائن پر فائرنگ،خاتون جاں بحق، 3افراد زخمی

  

اسلام آباد /مظفر آباد (این این آئی)بھارتی فوج نے ایک بار پھر جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے حاجی پور سیکٹر کے ضلع حویلی کے گاؤں ہیلان بالا میں شدید فائرنگ کی جس کے نتیجے میں ایک خاتون جاں بحق اور ایک خاتون سمیت 2 افراد زخمی ہوگئے۔ضلع حویلی کی پولیس کے مطابق بھارتی فوج نے بغیر کسی وجہ کے صبح تقریباً ساڑھے 11 بجے فائرنگ شروع کی۔پولیس عہدیدار نے بتایا کہ جاں بحق ہونے والی خاتون کی شناخت 75 سالہ عطرن بی بی کے نام سے ہوئی ہے جو اپنے گھر کے برآمدے میں بیٹھی تھیں کہ ایک شیل آکر ان کے قریب گرا۔آزاد جموں و کشمیر کے ڈیزاسٹر مینجمنٹ اینڈ سول ڈیفنس کے سیکریٹری سید شاہد محی الدین قادری کے مطابق بھارتی پولیس نے نیزاپور سیکٹر کے ضلع حویلی، کھلنا اور لیپا سیکٹر کی وادی جہم کے ضلع میں بھی فائرنگ کی لیکن ابتدائی طور پر کسی نقصان کی اطلاع نہیں ملی۔رپورٹس کے مطابق گوئی، نکیال سیکٹر کے ضلع کوٹلی میں بھی بھارتی فورسز نے شدید شیلنگ کی جہاں ایک شہری زخمی ہوا اور چند گھروں کو نقصان پہنچا۔ضلع کوٹلی کے اسسٹنٹ کمشنر (اے سی) سردار عمر فاروق کا کہنا تھا کہ گاؤں ڈیٹوٹ میں ایک شہری بری طرح زخمی ہوا جن کو ہسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ شیلنگ شدید اور بلاامتیاز تھی جو شام تک جاری رہی جس کے نتیجے میں انتظامیہ کو امدادی کاموں میں دشواری کا سامنا کرنا پڑا۔ان علاقوں کے شہریوں کا کہنا تھا کہ پاکستانی فوج نے بھی بھارتی شیلنگ کا بھرپور جواب دیاجس کے بعد بھارتی توپیں خاموش ہوگئیں۔وزیراعظم آزاد جموں و کشمیر راجا فاروق حیدر نے غیر مسلح شہریوں پر شیلنگ کی مذمت کرتے ہوئے اقوام متحدہ اور عالمی برادری سے مطالبہ کیا کہ وہ بھارتی فوج کی جانب سے مقبوضہ جموں و کشمیر اور ایل او سی پر انسانی حقوق کی بدترین پامالی اورجنگ بندی کی خلاف ورزی پر خاموشی توڑ دیں۔انہوں نے کہا کہ مقبوضہ جموں و کشمیر میں انسانی حقوق کی صورت حال مزید خراب ہونے سے قبل اور ایل او سی میں مسلط کی گئی غیر اعلانیہ جنگ کے خلاف اپنے مینڈیٹ کے مطابق توجہ دیں اور کشمیریوں کی خواہشات کے مطابق مسئلے کو حل کرلیا جائے۔

بھارتی فائرنگ

مزید :

صفحہ اول -