آئی جی سندھ کی سرکاری رہائش گاہ پر تعینات 23 اہلکار کورونا کا شکار

آئی جی سندھ کی سرکاری رہائش گاہ پر تعینات 23 اہلکار کورونا کا شکار

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک)انسپکٹر جنرل سندھ پولیس کی سرکاری رہائش گاہ پر تعینات 23 پولیس اہلکار کورونا وائرس کا شکار ہوگئے ہیں جبکہ پولیس ٹریننگ سینٹر سعید آباد کے 79 اور شاہراہ نورجہاں تھانے کے ایس ایچ او سمیت 21 پولیس اہلکاروں میں بھی کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔ذرائع کے مطابق کراچی کے علاقے باتھ آئی لینڈ میں واقع انسپکٹر جنرل پولیس کی سرکاری رہائش گاہ پر مختلف ڈیوٹی پر تعینات لگ بھگ 23 پولیس ملازمین کے کورونا وائرس کے ٹیسٹ مثبت آئے ہیں۔ ان پولیس اہلکاروں میں پولیس سربراہ کے گن مین، گارڈز، ڈرائیورز اور دیگر شامل ہیں۔ ان تمام پولیس ملازمین کو آئسولیٹ کرکے ان کی جگہ کورونا وائرس سے پاک نفری تعینات کردی گئی ہے جبکہ رہائشگاہ پر جراثیم کش اسپرے بھی کیا جارہا ہے۔پولیس ذرائع کے مطابق کراچی کے ضلع سینٹرل کے شاہراہ نورجہاں تھانے کے ایس ایچ او سمیت 21 پولیس افسران اور اہلکاروں میں بھی کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔پولیس ٹریننگ سینٹر سعید آباد کے پرنسپل شوکت علی کھٹیان نے بتایا کہ سندھ پولیس کے 400 سے زائد افسران اور اہلکاروں کی نفری پی ٹی سی سعید آباد میں مختلف کورسز پر ہے جو کورونا وائرس کی وجہ سے ان دنوں چھٹیوں پر ہے۔ سینٹر میں انتظامی ڈیوٹی پر تعینات 2 ڈی ایس پیز، انسپکٹرز اور سب انسپکٹرز سمیت 79 پولیس ملازمین کے کورونا وائرس کے ٹیسٹ مثبت آئے ہیں۔ ان ملازمین کو آئسولیٹ کردیا گیا ہے۔واضح رہے کہ صوبے کی پولیس کے 758 پولیس افسران اور اہلکار کورونا وائرس کا شکار ہوچکے ہیں جبکہ صحتیاب ہونے والوں کی تعداد 194 ہے اور 8 پولیس ملازمین انتقال کرچکے ہیں۔

کورونا کا شکار

مزید :

صفحہ اول -