ہائر ایجوکیشن کے بجٹ میں کمی سے نوجوان طلباء کے مستقبل کونقصان ہوگا،ابراہیم حسن

  ہائر ایجوکیشن کے بجٹ میں کمی سے نوجوان طلباء کے مستقبل کونقصان ...

  

لاہور (پ ر) صدر یو نیورسٹی آف مینجمنٹ اینڈ ٹیکنالوجی (یو ایم ٹی) ابراہیم حسن مراد نے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہائر ایجوکیشن کے بجٹ میں کمی سے ایکڈیمیا کو مالی پریشانی کے باعث ہمارے نوجوان طلباء کا مستقبل خطر ے میں پڑ جائے گا، جس کے سبب نوجوان سڑکوں پر آنے پر مجبور ہو جائیں گے۔ انکا کہنا تھا کہ حکومت کی جانب سے نوجوان طلبا ء کوتعلیمی فنڈ کے ذریعے رلیف ملنا چاہیئے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ حکومت پاکستان کو چاہیئے کہ ہمارے نوجو انوں کیلیئے ٹیکس فری تعلمی فنڈز جاری کرے تاکہ وہ کوویڈ - 19 جیسے مشکل حالات میں اپنی تعلیم جاری رکھ سکیں کیونکہ یہ طلباء ہی ہمارے ملک کے مستقبل کا قیمتی اثا ثہ ہیں۔ابراہیم مراد کا کہناتھا کہ رواں مالی سال (2020-2021) میں اگر شعبہ ہائر ایجو کیشن کے بجٹ میں خاطر خواہ اضافہ ناہوا تو ہمارے نوجوان طلباء کا مستقبل داؤ پر لگ سکتا ہے کیونکہ کوویڈ - 19 کی وجہ سے پیدا ہونے والے مشکل حالات میں تعلیم کا شعبہ پہلے ہی مالی پریشانیوں کا شکار ہے۔ انکا یہ بھی کہنا تھا کہ حکومت پاکستان اور ہائر ایجوکیشن کو چاہیئے کہ کسی بھی ناخوشگوار صوتحال سے بچنے کیلیئے سنجیدگی سے نوٹس لے کر اضافی اقدامات کرتے ہوئے ہنگامی بنیادوں پر اس مسئلے کا حل تلاش کر ے۔

اور موجودہ مالی پریشانی اور مشکل صورتحال میں نوجوان طلباء کیلیئے خصوصی رلیف پیکج جاری کرے۔صدر یو ایم ٹی نے اس بات پر زور دیتے ہوئے کہا کہ تعلیمی اصلاحات موجودہ حکومت کے منشور کا اہم حصہ تھا۔ لہٰذا حکومت کی اولین ترجیح ہونی چاہیے کہ شعبہ تعلیم کو کسی بھی مالی بحران میں مبتلا ہونے سے بچایا جائے کیونکہ پاکستان میں شرح خواندگی کی صورتحال پہلے ہی بہت خر اب ہے۔آخر میں صدر یو ایم ٹی ابراہیم حسن مراد نے حکومت سے نیک تمناؤں کا اظہار کرتے ہوئے درخواست کی ہے کہ وہ جلد از جلد ہمارے نوجوان طلبہ و طالبات کے تعلیم کے حصول کیلیئے خصوصی تعلیمی رلیف پیکج جاری کریں تاکہ وہ اپنی تعلیم کے سفر کو بغیر کسی پریشانی کے جاری رکھ سکیں۔

مزید :

کامرس -