شانگلہ کوباریاں لینے والوں نے یکسرنظرانداز کیا، شوکت علی یوسفزئی

شانگلہ کوباریاں لینے والوں نے یکسرنظرانداز کیا، شوکت علی یوسفزئی

  

پشاور(سٹاف رپورٹر)خیبرپختونخوا کے وزیر محنت اور ثقافت شوکت یوسفزئی نے گزشتہ روز بیلاولی شانگلہ میں ہسپتال کا افتتاح کیا جس پر تقریباً 5 کروڑ 43 لاکھ روپے خرچ ہونگے۔ افتتاح کے موقع پر میڈیا سے اظہار خیال کرتے ہوئے صوبائی وزیر نے کہا کہ شانگلہ کو ماضی میں یہاں پر باریاں لینے والوں نے صحت جیسی بنیادی ضروریات بھی فراہم نہیں کیں جس کی وجہ سے یہاں کے عوام صحت کے مسائل سے دوچار ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ شانگلہ کے عوام سے کیا گیا وعدہ پورا کرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی جا رہی اس ہسپتال کے قیام سے نہ صرف پیر کھانہ بلکہ آس پاس کے علاقوں کے لوگ بھی مستفید ہونگے۔ اس موقع پر صوبائی وزیر کے ساتھ چیئرمین ڈیڈک سوات فضل حکیم خان، سابق صوبائی وزیر حاجی عبدالمنیم، پی ٹی آئی ملاکنڈ ڈویژن کے سنیئر نائب صدر حاجی سدید الرحمٰن، ضلعی رہنما وقار خان، زکوٰۃ کمیٹی چئیرمین ابرار اور دیگر بھی موجود تھے۔ شوکت یوسفزئی نے شانگلہ کے مختلف مقامات پر کروڑوں روپے کے ترقیاتی منصوبوں، حفاظتی پشتوں اور سڑکوں کا افتتاح بھی کیا۔ پیر کھانہ میں عوام نے صوبائی وزیر کو روڈ کی تکمیل میں حائل رکاوٹوں سے آگاہ کیا جس پر انہوں نے عوام کو یقین دلایا کہ وہ آئندہ ہفتے بذات خود EERA چئیرمین سے ملاقات کرکے روڈ کی تکمیل کو جلد مکمل کرنے کو یقینی بنائیں گے اور اس کے لیے فنڈز کا اجراء کیا جائے گا۔ شوکت یوسفزئی نے مین باسی روڈ کی پختگی کا بھی افتتاح کیا جس میں تقریباً 43 لاکھ روپے خرچ ہونگے۔ اپنے دورے کے دوران صوبائی وزیر نے شانگلہ میں نئے سیاحتی مقامات کی دریافت کے لیے کنڈاو سر اور بھادر سر کا پیدل دورہ کیا اور جنت نظیر سیاحتی مقامات کو لوگوں کے سامنے لانے کے لیے صوبائی وزیر میڈیا کو بھی ساتھ لے گئے۔ وہاں کنڈاو سر اور بہادر سر پہنچنے پر بڑی تعداد میں لوگ شوکت یوسفزئی کے پاس جمع ہو گئے اور خوشی کا اظہار کیا۔ رہائشی افراد نے صوبائی وزیر کو علاقے کے مسائل سے بھی آگاہ کیا۔ اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے صوبائی وزیر نے کہا کہ شانگلہ میں سیاحت کے لیے بے شمار اور دنیا کے بہترین مقامات موجود ہے لیکن بدقسمتی سے ماضی میں سیاحت پر توجہ نہیں دی گئی۔ وزیر اعلیٰ محمود خان سیاحت کے فروغ اور سیاحتی مقامات تک سڑکوں کی تعمیر پر خصوصی توجہ دے رہے ہیں۔ ان مقامات تک جلد سڑکوں کی تعمیر شروع کی جا رہی ہے جس سے نہ صرف یہاں سیاحت کو فروغ ملے گا بلکہ لوگوں کو سہولیات کے ساتھ ساتھ روزگار کے مواقع بھی میسر ہو جائیں گے۔ انہوں نے بہادر سر اور کنڈاو سر میں لوگوں کے مطالبے پر سڑک کی فوری تعمیر کی یقین دہانی کرائی جس پر لوگوں نے شوکت یوسفزئی کا شکریہ ادا کیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -