ملگری استاذان نے وفاقی بجٹ مسترد کردیا

ملگری استاذان نے وفاقی بجٹ مسترد کردیا

  

شیرگڑھ (نامہ نگار) ملگری استاذان ضلع مردان نے وفاقی بجٹ مسترد کردیا پاکستان کی تاریخ میں پہلی بجٹ ہے جس میں غریب سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ نہ کیا گیا جبکہ ارکان اسمبلی،سینٹ کے ارکان اور وزراء کی تنخواہوں میں 300فیصد اضافہ کر دیا گیا ہے فوری طور پرتنخواہوں میں اضافہ نہ کیا گیا تو ملگری استاذان ملک بھر کے ملازمین کو ساتھ ملا کر اسلام اباد پر یلغار کریں گے ان خیالات کا ملگری استاذان ضلع مردان کے صدر عثمان سنگر،سابق صدر حفظ الرحمن،تحصیل تخت بھائی کے صدر ادریس تنولی، امتیاز خان،کبل خان لوند خوڑ،مرتضیٰ خان اور فاتح الرحمن جلالہ نے صحافیوں سے بات چیت کے دوران کیا انہوں نے کہا کہ سرکاری ملازمین ملک کی ترقی میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے اور ہر سال سرکاری ملازمین کی تنخواہوں معمولی اضافہ کیا جاتا ہے جو کہ اونٹ کے منہ میں زیرے کے برابر ہوتا ہیں تحریک انصاف کے دوسالہ حکومت میں مہنگائی 300فیصد بڑھ گئی ہے جس کا اعتراف کرتے ہوئے حکومت نے اپنے وزراء،ارکان اسمبلی اور سینٹ کے ارکان کے تنخواہوں میں 300فیصد اضافہ کردیا جبکہ مہنگائی کی چکی میں پسی ہوئی غریب سرکاری ملازمین نے سالانہ بجٹ سے امیدیں وابستہ کر رکھی ہوتھی کہ بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں خاطر خواہ اضافہ کیا جائیگا لیکن حکومت نے سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ نہ کرکے دو سال سے ریلیف کے منتظر سرکاری ملازمین کے امیدوں پر پانی پھیر دیا انہوں نے مطالبہ کیا کہ فوری طور پر مہنگائی کے تناسب سے سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں 100فیصد اضافہ کیا جائے ورنہ ملگری استاذان ملک بھر کے سرکاری ملازمین کو ساتھ ملا کر اسلام اباد پر یلغار کریں گے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -