وفاقی بجٹ، تبدیلی سرکارکی نااہلی ثابت ہوئی، ملک دیوالیہ کردیا گیا ہے، سردار حسین بابک

وفاقی بجٹ، تبدیلی سرکارکی نااہلی ثابت ہوئی، ملک دیوالیہ کردیا گیا ہے، سردار ...

  

پشاور(پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری و ڈپٹی اپوزیشن لیڈر سردارحسین بابک نے کہا ہے کہ وفاقی بجٹ نے تبدیلی سرکاری کی نااہلی ثابت کردی ہے۔ ملک مالی طور پر دیوالیہ کردیا گیا ہے، مہنگائی میں ہوشربا اضافے کے باوجود سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ نہ کرنا زیادتی ہے۔ وفاقی بجٹ میں ہمارے صوبے کا حصہ کون کھاگئے ہیں۔ باچاخان مرکز پشاور سے جاری بیان میں اے این پی کے صوبائی جنرل سیکرٹری نے کہا ہے کہ ہمارے قدرتی وسائل اور ذرائع آمدن کا ملک ملک کے انتظام چلانے میں کلیدی کردار ہے۔ ہمارے صوبے کو وفاقی بجٹ میں نظرانداز کرنے سے پختونوں کو کیا پیغام دیا جارہا ہے؟ تبدیلی سرکار کی ناتجربہ کار ٹیم نے ملک کے تمام ادارے اور شعبوں کو تباہ و برباد کردیا ہے۔ بے روزگاری اور مہنگائی کا نیا طوفان دیکھ رہے ہیں۔نااہل حکمرانوں نے ملک کو کمزور اور عوام کو فاقوں پر مجبور کردیا ہے۔ سردارحسین بابک نے کہا کہ ہمارے صوبے میں کوئی میگا پراجیکٹ کا نہ ہونا،پختون وزراء اور ممبران قومی اسمبلی و سینیٹ جن کا تعلق پی ٹی آئی سے ہے، پختون قوم کو کیا جواز پیش کریں گے؟ تبدیلی سرکار کی حکومت میں ہمارے صوبے کیلئے وفاقی بجٹ میں ایک میگا واٹ بجلی پیدا کرنے کا فنڈ موجود نہیں۔ تبدیلی سرکار ہمارے صوبے کو کس جرم کی سزا دے رہی ہے۔ پختون نوجوانوں نے جنون کے جذبے کے ساتھ عمران خان کا انتخاب کیا تھا، آج وہ پختون نوجوان عمران خان سے پوچھیں اور ہمارے صوبے کے ساتھ سوتیلی ماں کے سلوک کا جواز مانگیں۔ سردارحسین بابک نے کہا کہ اوورسیز پختونوں کو دونوں ہاتھوں سے لوٹنے کا عمل جاری ہے لیکن وفاقی بجٹ نے پختونوں کے زخموں پر نم چڑک دی ہے۔ ایسے حالات میں پختون نوجوانوں کا حق بنتا ہے کہ وہ تبدیلی سرکار سے پوچھے کہ ملکی اداروں کو تباہی کے دہانے پر پہنچانے اور ذرائع آمدن مخدوش کرنے کے ذمہ دار اب پچھلی حکومتیں ہیں؟ پختون نوجوان باشعور ہیں۔ انہوں نے جس جذبے کے تحت عمران خان کو سپورٹ کیا، آج ہر طرف مایوسی پھیلی ہوئی ہے۔ ملک بھر میں صرف پی ٹی آئی کی حکومت میں جبکہ کروڑوں عوام اپوزیشن میں ہیں۔ عمران خان اس دن کا انتظار کررہے ہیں جب 22کروڑ عوام سڑکوں پر ہوں گے اور گو عمران گو کا نعرہ لگائیں گے۔ اے این پی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردارحسین بابک نے مزید کہا کہ ہر طبقہ فکر کے لوگ احتجاج کیلئے بے قرار ہیں لیکن کورونا وباء نے ان کو روکا ہوا ہے۔ تبدیلی سرکار کا ہر نیا روز عوام کے مشکلات اور مصائب میں اضافے کا سبب بن رہا ہے۔ ہمارے صوبے کے ساتھ ایک منظم کوشش اور سازش کے تحت زیادتی ہورہی ہے۔ پی ٹی آئی ممبران قومی اسمبلی و سینیٹ صوبے کے ساتھ ہونے والی اس زیادتی پر خاموشی انکو مہنگی پڑے گی۔ عوام انہیں معاف نہیں کریں گے۔ پی ٹی آئی کے ممبران پارلیمنٹ نے صوبے کے ساتھ ہونے والی اس زیادتی پر چپ کا روزہ رکھا ہوا ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -