بجٹ سے عوام میں مزید مایوسی پھیلی ہے، مفتی محمدنعیم

بجٹ سے عوام میں مزید مایوسی پھیلی ہے، مفتی محمدنعیم

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)بجٹ سے عوام میں مزید مایوسی پھیلی ہے،بھوک و افلاس اور بیروزگاری کی ڈسی قوم کو موبائلوں کی نہیں روٹی کی ضرورت ہے، حکومت بتائے،بغیر بجٹ میں حصے کے اہل مدارس خوداصلاحات کرنے کو تیار ہیں،اصلاحات کے نام پر مختص رقم عصری تعلیمی نظام اور اداروں کو بہتر بنانے پر لگائی جائے، مدارس اصلاحات کے نام پر رقم مختص کرنا سوائے الفاظ کی ہیر پھیر کے کچھ بھی نہیں ہے۔ گزشتہ روزجامعہ بنوریہ عالمیہ میں بجٹ 2020˜کے حوالے گفتگو کرتے ہوئے رئیس وشیخ الحدیث مفتی محمدنعیم نے کہاکہ بجٹ ملکی معیشت میں بہتری کیلئے کتنا مؤ ثر ہوگا اس پر رائے تو ماہرین ہی دے سکتے ہیں،موجودہ صورتحال اور ظاہری احوال سے لگتا ہے،مہنگائی اور بیروزگاری میں اضافے کے باعث بجٹ عوام میں مزید مایوسی کا سبب بننے گا۔انہوں نے کہاکہ مدارس اصلاحات کی فکر کے بجائے عصری تعلیمی نظام اور اداروں کو بہتر بنانے کی ضرورت ہے،اصلاحات کیلئے مختص رقم کو ان اداروں کی بہتری پر لگایا جائے،مدارس مالی مشکلات کے باوجود نہ بجلی بل معاف کیے گئے اور نہ ہی کسی مدرسے کے ملازمین اور استاتذہ کی امداد کی،اب بجٹ مختص کرنا سمجھ سے بالاتر ہے

مزید :

صفحہ آخر -