37 کروڑ روپے کے دو بڑے سرکاری گھروں کی تعمیرکامنصوبہ ڈراپ

37 کروڑ روپے کے دو بڑے سرکاری گھروں کی تعمیرکامنصوبہ ڈراپ
37 کروڑ روپے کے دو بڑے سرکاری گھروں کی تعمیرکامنصوبہ ڈراپ

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک) بجٹ میں 37 کروڑ روپے مالیت کے دو بڑے سرکاری گھر تعمیرکرنے کے منصوبے ڈراپ کر دیے گئے ہیں۔

روزنامہ جنگ کے مطابق بجٹ میں چیف الیکشن کمشنر اورچیئر مین سینیٹ کیلئے سرکاری رہائش گاہ تعمیر کرنے کا منصوبہ ڈراپ کر دیا گیا ہے۔بجٹ میں دو سرکاری گھروں کی تعمیر کے نئے منصوبے شروع کرنے کی تجویز دی گئی تھی۔ صادق سنجرانی نے چئیرمین سینیٹ کی سرکاری رہائش گاہ منصوبہ موخر کرنے کا خط بھی لکھا تھا بجٹ میں دو سرکاری گھروں کی تعمیر کیلئے کل 15 کروڑ روپے رکھنے کی تجویز دی گئی تھی۔ چئر مین سینیٹ کی سرکاری رہائش گاہ کی تعمیر کیلئے 10 کروڑ روپے رکھنے کی تجویز تھی۔

چیف الیکشن کمشنر کی رہائش کی تعمیر کیلئے 5 کروڑ روپے رکھنے کی تجویز دی گئی تھی۔چیئر مین سینیٹ کیلئے اسلام آباد کے منسٹر انکلیو اور چیف الیکشن کمشنر کیلئے ایف فائیو سیکٹر میں رہائش گاہ تعمیر کرنے کی تجویز دی گئی تھی۔ چیئرمین سینیٹ کی رہائش گاہ کے منصوبے کی مجموعی لاگت کا تخمینہ 27 کروڑ روپے لگایا گیا۔چیف الیکشن کمشنر کی رہائش گاہ کی تعمیر کا مجموعی تخمینہ 9 کروڑ 86 لاکھ روپے لگایا گیا۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -