'بھارت 'توسیع پسندانہ قوم کی طرح برتاؤ' کرنے کے بجائے۔۔۔'' شاہ محمود قریشی بھی چپ نہ رہے

'بھارت 'توسیع پسندانہ قوم کی طرح برتاؤ' کرنے کے بجائے۔۔۔'' شاہ محمود قریشی بھی ...
'بھارت 'توسیع پسندانہ قوم کی طرح برتاؤ' کرنے کے بجائے۔۔۔'' شاہ محمود قریشی بھی چپ نہ رہے

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) تمام ہمسائیہ ممالک کے ساتھ تنازعات پیدا کرنے والے بھارت کو وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے آئینہ دکھا دیا، شاہ محمود کہتے ہیں کہ 'بھارت 'توسیع پسندانہ قوم کی طرح برتاؤ' کرنے کے بجائے داخلی معاملات پر توجہ دے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر دیئے گئے اپنے بیان میں شاہ محمود قریشی نے کہا کہ مود ی حکومت اور ''پڑوسی پہلے''کی  پالیسی بھارت کو یہ احساس دلائے گی کہ انڈیا کو ہمسایوں سے زیادہ اس کی اپنی پالیسیوں ، ناکامیوں اور شدت پسندی سے خطرہ ہے۔

اپنے دوسرے ٹویٹ میں وزیرخارجہ نے کہا  سرحدی تنازع کو بڑھکانے پر بھارت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی کی موجودہ حکومت کو توسیع پسندی کے بجائے بھارت کے غریب، نچلے طبقے اور اقلیتوں کی بہتر خدمت کرنے پر توجہ مرکوز کرنی چاہیے۔

خیال رہے کہ وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کے ٹوئٹس وزیراعظم عمران خان کی اس پیشکش کے بعد سامنے آئے جس میں انہوں نے ضرورت مند گھرانوں کو نقد رقم کی منتقلی کے پروگرام کے سلسلے میں بھارت کو معاونت فراہن کرنے کا کہا تھا۔

عمران خان نے ٹوئٹ کے ذریعے کہا تھا کہ 'ہماری حکومت نے 9 ہفتوں کے دوران ایک کروڑ خاندانوں کو کورونا وائرس سے پیدا ہونے والی صورت حال میں احساس کیش پروگرام کے ذریعے 120 ارب روپے کی نقد رقم شفاف طریقے سے فراہم کی ہے، جبکہ ہمارے اس پروگرام کو بین الاقوامی طو رپر سراہا گیا۔'

وزیر اعظم نے پیش کش کی تھی کہ وہ اس طرح کے پروگرام کے لیے بھارت کو مدد اور معاونت فراہم کرنے کے لیے تیار ہیں۔

مزید :

قومی -