بجٹ سے معیشت پر مثبت اثرات مرتب ہونگے: صفدر علی بٹ

  بجٹ سے معیشت پر مثبت اثرات مرتب ہونگے: صفدر علی بٹ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


 لاہور(سٹی رپورٹر)صدر لبرٹی مارکیٹ بورڈصفدر علی بٹ نے وفاقی بجٹ کو مجموعی طو رپر خوش آئند قرار دی ا ہے۔ انہوں نے آئندہ  مالی سال کے بجٹ کو صنعت اور عوام دوست قرار دیتے ہوئے کہا کہ صنعتوں کی بحالی کیلئے خام مال اور کسٹم ڈیوٹی کے حوالے سے 1600ٹیرف لائنوں اور کسٹم ڈیوٹی میں 4200ارب روپے کی مراعات سے صنعتی شعبہ کو مستحکم اور پائیدار بنیادوں پر استوار کرنے میں مدد ملے گی۔انہوں نے کہا ہے کہ حکومت معیشت کی بنیادبرآمدات پر رکھنا چاہتی ہے تواس کیلئے مزید غیر معمولی اقدامات کرنا ہوں گے، انہوں نے اس بجٹ کو تاریخی قرار دیا اور کہا کہ ایس ایم ای سیکٹر کیلئے حکومت نے فکس ٹیکس سکیم کا اجراء کیا ہے جو انتہائی قابل تحسین اقدام ہے اور اس سے اس شعبہ کو ترقی کرنے میں مدد ملے گی۔ انہوں نے آئی ٹی سیکٹر کی ترقی کیلئے فری لانسنگ کے فروغ کیلئے خصوصی رجیم کے تحت زیر و ریٹنگ سکیم کو بھی سراہا اور کہا کہ اس سے آئی ٹی کی ترقی اور آئی ٹی مصنوعات کی برآمدات کو بڑھانے میں مدد ملے گی۔ انہوں نے متوسط طبقہ کیلئے ساڑھے آٹھ سو سی سی کاروں سے ایکسائز ڈیوٹی کے خاتمے اور 17 فیصد سیل ٹیکس کو ساڑھے بارہ فیصدکرنے کے فیصلے کو بھی سراہا۔ انہوں نے کہا کہ بجٹ میں بہت سی مراعات دی گئی ہیں ماحولیاتی تبدیلیوں کا ذکر کرتے ہوئے صفدر علی بٹ نے کہا کہ حکومت نے دس ارب درخت لگانے کی سکیم کو جاری رکھنے کا فیصلہ کیا ہے جو ماحولیاتی آلودگی پر قابو پانے پر مدد ملے گی۔انہوں نے  کم از کم تنخواہ 20ہزار روپے مقرر کرنے سے کمزور طبقوں کو خاصا ریلیف ملے گا۔ انہوں نے کہا کہ مہنگائی اس وقت سب سے بڑا مسئلہ ہے جو 9.1 فیصدہے۔ حکومت نے اس کو 6.5فیصد کی سطح تک لانے کا ہدف مقرر کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بلاشبہ یہ بہت بڑا ٹارگٹ ہے۔ انہوں نے تنخواہ دار طبقہ کی تنخواہوں اور پنشنروں کی پنشن میں دس فیصد اضافے کے فیصلے کو سراہا۔ انہوں نے کہا کہ بنیادی طو پر موجودہ بجٹ سے صنعتی عمل تیز ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ مجموعی طور پر یہ صنعت دوست بجٹ ہے۔

مزید :

کامرس -