بڑا ملک جس کے صدر کو کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزی پر بھاری جرمانہ کردیا گیا

بڑا ملک جس کے صدر کو کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزی پر بھاری جرمانہ کردیا گیا
بڑا ملک جس کے صدر کو کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزی پر بھاری جرمانہ کردیا گیا

  

برازیلیا (ویب ڈیسک)  برازیل کے صدر جیئر بولسونارو کو ماسک کے بغیر موٹر سائیکل کی ایک ریلی اور اس کی اختتامی تقریب میں شرکت پر 90 یورو جرمانہ عائد کیا گیا، واضح رہے کہ کورونا ایس اوپیز کی خلاف ورزی پر دیگر ممالک کے سربراہان کو بھی اپنی ہی ریاست میں جرمانہ کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ چلی کے صدر سبستیان پنیرا کو عوامی مقام پر ماسک نہ پہننے پر 3 ہزار 500 ڈالر اور ناروے کی وزیراعظم ایرنا سولبرگ کو 2 ہزار 300 ڈالر جرمانہ بھرنا پڑا تھا۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق برازیل کے صدر جیئر بولسونارو اپنے بیٹے ایڈوآرڈو اور ایک وزیر تارسیسیو گومیز کے ساتھ موٹر سائیکل ریلی میں شریک تھے جہاں ہزاروں کی تعداد میں شائقین بھی موجود تھے تاہم اس دوران تینوں نے کورونا ایس او پیز کی سنگین خلاف ورزیاں کیں۔ صدر نے ماسک بھی نہیں لگایا ہوا تھا۔تقریب کی تصاویر اور ویڈیو وائرل ہونے پر ملکی عدالت نے صدر جیئر بولسونارو کو ماسک نہ پہننے پر 90 یورو جرمانہ عائد کیا جب کہ ان کے بیٹے اور وفاقی وزیر پر بھی اتنا ہی جرمانہ عائد کیا گیا۔ برازیل کے صدر پر کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزی پر دوسری بار جرمانہ کیا گیا ہے۔

برازیل کے صدر کورونا کے حوالے سے مضحکہ خیز اور متنازع بیانات کے باعث شہرت رکھتے ہیں اور کئی بار ہزیمت اُٹھا چکے ہیں۔ فائزر کی ویکسین کے سائیڈ ایفیکٹس نہ ہونے کے دعویٰ پر صدر جیئر بولسونارو نے کہا تھا کہ ویکسین لگنے سے کوئی مگر مچھ بھی بن جائے تو کمپنی کی ذمہ داری نہیں ہوگی۔

مزید :

بین الاقوامی -