لڑکی کا ہاتھ مانگنے آنے والے نوجوان کو قتل کر کے لاش نہر میں بہا دی لیکن ملزمان کو مقتول کے بھائی نے کس طرح پہچانا ، حیران کن خبر آ گئی 

لڑکی کا ہاتھ مانگنے آنے والے نوجوان کو قتل کر کے لاش نہر میں بہا دی لیکن ...
لڑکی کا ہاتھ مانگنے آنے والے نوجوان کو قتل کر کے لاش نہر میں بہا دی لیکن ملزمان کو مقتول کے بھائی نے کس طرح پہچانا ، حیران کن خبر آ گئی 

  

گوجرانوالہ (ڈیلی پاکستان آن لائن )آبادی کے لحاظ سے پاکستان کے پانچویں بڑے شہرمیں انتہائی خوفناک واقعہ پیش آیا ہے جہاں 30 سالہ نوجوان کو شادی کیلئے لڑکی کا ہاتھ مانگنے کی پاداش میں قتل کر نے کے بعد لاش کے ٹکرے کرتے ہوئے نہر میں پھینک دیئے گئے ۔

تفصیلات کے مطابق پولیس نے واقعہ کا مقدمہ قتل ہونے والے رضوان کے بھائی ارشد علی بھٹی کی مدعیت میں درج کر لیاہے ، مدعی کا کہناتھا کہ اس کے بھائی نے جب طارق ایوب سے اس کی بیٹی کا رشتہ مانگا تو وہ آگ بگولہ ہو گیا اور رضوان کو قتل کر دیا ۔ ارشد نے ایف آئی آر میں کہا کہ طارق ایوب کے بیٹے امیر حمزہ نے رضوان کے جسم کے ٹکروں کو شاپر میں باندھا اور گوجرانوالہ کی نزدیگی نہر میں بہا دیا ۔ارشد کا کہناتھا کہ اس کا بھائی لڑکی کے گھر اکثر جایا کرتا تھا لیکن اس مرتبہ وہ واپس نہیں آیا ، جب بھائی کے ساتھ کوئی رابطہ نہ ہوا تو ہمیں شک ہو گیا ، طارق اور اس کے بیٹے کو کچھ لوگوں نے نہر میں شاپر پھینکتے ہوئے دیکھا تھا ، 

ارشد نے ایف آئی آر میں بتایا کہ جب وہ طارق ایوب کے گھر پہنچا تو ملزم نے رضوان کے جوتے پہن رکھے تھے جسے میں نے فوری پہنچا ن لیا ، ملزم نے ابتدائی طور پر بہانے بنانا شرو عکر دیئے اور کہا کہ رضوان یہاں پر آیا ہی نہیں ۔رضوان کے اہل خانہ کی جانب سے اپیل کی گئی ہے کہ ملزمان کو گرفتار کیا جائے اور لاش برآمد کی جائے ۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -گوجرانوالہ -