اسمبلی اجلاس کا ضابطہ اخلاق طے کرنے کے لیے سپیکر کی سربراہی میں ہونے والا اجلاس بے نتیجہ ختم ہوگیا

اسمبلی اجلاس کا ضابطہ اخلاق طے کرنے کے لیے سپیکر کی سربراہی میں ہونے والا ...
اسمبلی اجلاس کا ضابطہ اخلاق طے کرنے کے لیے سپیکر کی سربراہی میں ہونے والا اجلاس بے نتیجہ ختم ہوگیا

  

اسلام آباڈ(ڈیلی پاکستان آن لائن )قومی اسمبلی اجلاس میں ضابطہ اخلاق طے کرنے کے لیے سپیکر اسد قیصر کی سربراہی میں ہونے والا اجلاس میں بے نتیجہ ختم ہوگیا۔

جیو نیوز  کے مطابق قومی اسمبلی میں شور شرابے کو روکنے کے لیے سپیکر اسد قیصر کی زیر صدارت حکومت اور اپوزیشن  رہنماؤں کا اجلاس ہوا،تاہم مذاکرات کاپہلا دور بے نتیجہ رہا۔حکومت نے اجلاس میں اپوزیشن کو قومی اسمبلی کا اجلاس چلانے کے لیے ضابطہ اخلاق پیش کیا تھا جس میں کہا گیا کہ ہر رکن اسمبلی ناشائستہ اور غیر پارلیمانی زبان و بیان سے پرہیز کرے گا۔ خلاف ورزی پر سپیکر کی کارروائی سب کے لیے قابل قبول ہوگی۔اجلاس کے دوران حکومتی ارکان اپنے موقف پر ڈٹ گئے کہ اپوزیشن ارکان شور شرابا کریں گے تو وہ بھی خاموش نہیں رہیں گے۔وزیر خارجہ شاہ محمو دقریشی کا کہنا تھا کہ یہ  نہیں ہو سکتا کہ اپوزیشن پارلیمنٹ میں بات کرے اور حکومت کو نہ کرنے دے۔

مزید :

قومی -