اپوزیشن کے بعد حکومت کی طرف سے نگران وزیراعظم کیلئے تین نام سامنے آگئے ، اتفاق رائے ہوتا دکھائی نہیں دیتا: مجیب الرحمان شامی

اپوزیشن کے بعد حکومت کی طرف سے نگران وزیراعظم کیلئے تین نام سامنے آگئے ، ...
اپوزیشن کے بعد حکومت کی طرف سے نگران وزیراعظم کیلئے تین نام سامنے آگئے ، اتفاق رائے ہوتا دکھائی نہیں دیتا: مجیب الرحمان شامی

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) اپوزیشن کے بعد نگران وزیراعظم کے لیے حکومت نے بھی اپنے تین نام پیش کردیئے ہیں جن میں میرہزار کھوسو، عشرت حسین اور سابق وزیرخزانہ عبدالحفیظ شیخ شامل ہیں ۔ سینئر تجزیہ نگار مجیب الرحمان شامی کاکہناہے کہ حکومت اور اپوزیشن میں نگران وزیراعظم کے معاملے پر اتفاق رائے نظر نہیں آتا۔ اپوزیشن جماعت نے جسٹس ریٹائرڈ ناصرا سلم زاہد، شاکراللہ جان اور رسول بخش پلیجو کا نام نگران وزیراعظم کے لیے تجویز کیاتھااور آج حکومت پاکستان کی جانب سے بھی نگران وزیراعظم کے نام سامنے آگئے ہیں اور دونوں جماعتوں کے درمیان کوئی ایک نام بھی مشترکہ نہیں ۔ حکومت کی طرف سے نگران سیٹ اپ کے لیے نام سامنے آنے پر دنیا نیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے روزنامہ پاکستان کے چیف ایڈیٹر مجیب الرحمان شامی کاکہناتھاکہ آئین کے مطابق حکومت اور اپوزیشن کو مشورے سے نگران وزیراعظم کا تقررکرناہے لیکن یہاں نام دینے کی روایت چل پڑی ہے، چھ نام سامنے آگئے ہیں لیکن اِن میں سے کون ہوگا، کیاطریقہ اختیار کیاجائے گا اور کون تقرر کرے گا؟اُنہوں نے کہاکہ وزیراعظم اور اپوزیشن لیڈر ملاقات کریں گے ، کسی ایک نام پر اتفاق ہوگیاتو ٹھیک ، لیکن تاحال اتفاق رائے ہوتا نظر نہیں آتا، معاملہ پارلیمانی کمیٹی کے پاس جائے گا اور بالآخر نگران وزیراعظم کے تقرر کامعاملہ الیکشن کمیشن کے پاس پہنچ جائے گا۔

مزید :

اسلام آباد -اہم خبریں -