ماہی گیروں کے قتل میں ملوث فوجیوں کی عدم پیشی پر بھارتی سپریم کورٹ کا اطالوی سفیر کونوٹس ، ملک چھوڑنے پر پابندی

ماہی گیروں کے قتل میں ملوث فوجیوں کی عدم پیشی پر بھارتی سپریم کورٹ کا اطالوی ...
ماہی گیروں کے قتل میں ملوث فوجیوں کی عدم پیشی پر بھارتی سپریم کورٹ کا اطالوی سفیر کونوٹس ، ملک چھوڑنے پر پابندی

  

نئی (مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی سپریم کورٹ نے دوماہی گیروں کی ہلاکت کے کیس میں اطالوی سفیر کو نوٹس جاری کرتے ہوئے اُن کے بغیر اجازت ملک چھوڑنے پر پابندی عائد کردی ۔بھارتی میڈیا ”دی ہندو“کے مطابق چیف جسٹس التمس کبیر کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے بنچ نے سفارتخانے کی یقین دہانی کے باوجود دو بھارتی ماہی گیروں کی ہلاکت میں ملوث اطالوی فوجیوں کے واپس نہ آنے کیخلاف کیس کی سماعت کی۔دوران سماعت اٹارنی جنرل نے کہاکہ یقین دہانی کے باوجود فوجیوں کے واپس نہ آنے پر تشویش ہے ، عدالت جلد کیس کا فیصلہ کرے ۔عدالت نے اطالوی سفیر ڈانیل منسینی کی یقین دہانی کے بعد الیکشن میں ووٹ ڈالنے کے لیے دوفوجیوں مسی میلیانولٹور اور سلویٹورگروکو اٹلی جانے کی اجازت دیدی تھی ۔ عدالت نے اطالوی سفیر اور دونوں فوجیوں کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 18مارچ کوجواب طلب کرلیاہے ۔ عدالت نے حکم دیاہے کہ جمعرات تک اٹلی میں موجود فوجیوں کواگر نوٹس موصول نہ ہوسکے تو اطالوی سفیر کے ذریعے نوٹس بھجوائے جائیں ۔واضح رہے کہ گذشتہ سال پندرہ فروری کو اطالوی فوجیوں کی فائرنگ سے کیرالہ کے ساحل پر دو بھارتی ماہی گیرہلاک ہوگئے تھے ۔

مزید :

بین الاقوامی -