اندرونی دبائو نظر انداز کرنا ہوگا ، مذاکرات کیلئے بھارت سنجیدہ رویہ اختیار کرے : حنا کھر

اندرونی دبائو نظر انداز کرنا ہوگا ، مذاکرات کیلئے بھارت سنجیدہ رویہ اختیار ...
اندرونی دبائو نظر انداز کرنا ہوگا ، مذاکرات کیلئے بھارت سنجیدہ رویہ اختیار کرے : حنا کھر

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وزیر خارجہ حنا ربانی کھر نے کہا ہے کہ پاکستان بھارت سے مذاکرات کے لئے سنجیدہ ہے لیکن دونوں ملکوں کو باہمی مسائل کے حل کے لئے اندرونی دباو¿ کو نظر انداز کرنا ہوگا۔سینیٹ میں مختلف سوالات کے جواب اور میڈیا سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان کے لئے افغانستان بہت اہمیت کا حامل ہے، وہاں جو بھی ہوتا ہے اس کے براہ راست اثرات پاکستان پر پڑتے ہیں۔ پاکستان کی خارجہ پالیسی کسی کے تابع نہیں، امید ہے کہ افغانستان بدلتے ہوئے پاکستان کے بارے میں نئے سرے سے سوچے گا۔انہوں نے کہاکہ لائن آف کنٹرول پر فائرنگ کے واقعات میں پاکستان کے چار فوجی اہلکار شہید ہوئے جسے بھارت نے تسلیم بھی کیا ہے۔ پاکستان اوربھارت کو مسائل کے حل کے لئے اندرونی دباو¿ کو نظر اندازکرتے ہوئے لیڈر شپ دکھانا ہوگی۔ اس سلسلے میں پاکستان نے بھارت کو مذاکرات میں سنجیدگی کا مو¿ثرپیغام دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سرکریک جیسے مسائل کے حل کے لئے پاکستان نے سنجیدہ کوششیں کیں تاہم سرکریک متنازعہ علاقے میں بھارت کی جانب سے تیل وگیس کی تلاش کے حوالے سے کوئی رپورٹ موجود نہیں۔

مزید :

اسلام آباد -اہم خبریں -