سعودی انویسٹمنٹ کس شعبے میں ہوئی وہ پرا جیکٹ جلد سامنے آجائے گا راجہ ریاض

سعودی انویسٹمنٹ کس شعبے میں ہوئی وہ پرا جیکٹ جلد سامنے آجائے گا راجہ ریاض ...
سعودی انویسٹمنٹ کس شعبے میں ہوئی وہ پرا جیکٹ جلد سامنے آجائے گا راجہ ریاض

  


                                                        فیصل آباد (بیورورپورٹ)ڈالر سستا کرنے کی آڑ میں قیمتی ملکی املاک فروخت کی جارہی ہیں ڈیڑھ سو ار ب روپے ملک میں آئے ہیں یہ نجکاری کا ”بیعانہ “ہے جو سعودیہ سے لیا گیا ہے اہم سعودی عہدے دار جو گذشتہ ماہ ملکی دورے پر تھے حکمرانوں نے مشرف ٹاک کے علاوہ یہ بھی ڈائیلاگ کیا کہ ہمارے ادارے کو خرید و ،یہ اداراہ پی آئی اے بھی ہوسکتا ہے ،سعودی انسو ئمنٹ کس شعبے میں ہوئی پراجیکٹ جلدسامنے آجائے گا،اسحاق ڈار کا غذو ں کی ہیر پھیری سے باہر نکل کر قوم کو حقائق سے آگاہ کریں،ملکی قرضے کم کرنے کے دعوے داروں نے آئی ایم ایف سے اتنے ہی مزید قرضے بھی لے لیے ہیں،واپڈا کے 460ارب روپے کے گردشی قرضے ختم نہیں ہوئے بلکہ مزید 350ارب روپے پھر قوم کے سر چڑھ چکے ہیں ،ان خیالات کا اظہار سابق سینئر صوبائی وزیر پنجاب و مرکزی راہنما پاکستان پیپلز پارٹی راجہ ریاض احمد خاں نے گذشتہ روز پاکستان سے خصوصی انٹر ویو کے دوران کیا مختلف سوالات کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے الزام عائد کیا کہ حکمران کرپشن کے ماہر ہیں اور اب تک نواز،شہباز اور ڈار ایک ہزار ارب روپے کی کرپشن کرچکے ہیں ،یہ لوگ لیگل اور میکیکل کرپشن کرتے ہیں اور ثبوت بھی نہیں چھوڑتے ،میٹرو بس پراجیکٹ اور مو ٹر وے کے نام پر کمیشن لیا جاتا ہے ،وزیر خزانہ ہیر پھیر کے ماہر ہیں قوم کو بتائیں کہ ڈالرکے نیچے آنے سے عام آدمی کو کیا فائد ہ ہواہے ،ضروریا ت زندگی اور عام آدمی کی ضرورت کی اشیاءمہنگی ہوئی ہیںصرف ارب پتی لوگو ں کو فائدہ ہوا ہے بجلی کی طلب و رسد او رگرانی کے حوالے سے حکومتی اقدامات پر تنقید کرتے ہوئے راجہ ریاض احمد نے کہا کہ عابد شیر علی سیاسی بونا ہے اسے کیا پتہ بجلی کی پیداوارکیا ہوتی ہے ،حکومت جلد ہی بجلی مہنگی کرے گی اور یونٹ 22 روپے کاملے گا ،آج کل شہری علاقے میں 8گھنٹے جبکہ دیہاتی علاقوں میں 16گھنٹے لو ڈ شیڈنگ ہورہی ہے توجون جولائی میں کیا بنے گا انہوں نے کہا کہ ڈالر سستا ہوا ہے تو بجلی کیوں سستی نہیں ہوئی ،گیس کی قیمت میں بھی اضافے کا سوچا جارہا ہے حالانکہ یہ ملکی پیداوار ہے ،حکمرانوں کو شرم آنی چاہئے کہ انڈسٹری تباہ ہورہی ہے سی این جی اسٹیشنز بند پڑ ے ہیں ،سابقہ ریکارڈ کے طرح اس سال 2ہزار میگا واٹ بجلی کی طلب بڑھ جائے گا،تھرکول منصوبہ جوکہ سندھ کا حکومت ہے اس کے ثمرات چار سال بعد میں ملیں گے ،حکومت کی کارکردگی صفر ہے ،ہم تسلیم کرتے ہیں کہ بجلی پیدانہ کرنا ہماری ناکامی ہے مگر موجودہ حکومت دعوے کرنے کی بجائے بجلی کے منصوبہ شروع کرے ،انہوں نے بتایا کہ ملک کو 12ہزار میگا واٹ بجلی کی فوری ضرورت ہے اس کے علاوہ کوئی چارہ نہیں ،طالبان مذاکرات کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ کل تک عمران خان نواز شریف کے خلاف بول رہے تھے آج یک دم یو ٹرن لے لیا ہے ،عمران نواز کو کسی بڑی طاقت نے اکٹھا کیا انہوں نے کہا کے ملک میں جب کوئی انہونی ہوتی ہے تو اس کے پس منظر میں کسی نہ کسی بہت بڑی طاقت کا ہا تھ ہوتا ہے انہوں نے کہا کہ دبئی امریکہ ،سعودیہ ،چائنا اور روس کاڈرائنگ روم ہے وہیں تمام بڑے فیصلے ہوتے ہیں طالبان اگر آئین پاکستان کا احترام کرنے پر رضا مند ہوںگے تو مذاکرات کامیا ب ہوں گے لیکن اگر انہوں نے وہ قیدی مانگے جنہوں نے ہمارے نوجوانوں کے سر قلم کئے اور اپنی شریعت نافذ کرنے کی کوشش کی تومذاکرات ناکام ہو جائیں گے ،ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ یہ بات سو فیصد غلط ہے کہ تھرپار کر میں کوئی بچہ بھوک اور قحط سے مرگیا ،دراصل وہا ں 21دن مسلسل شدید سردی پڑی ،ادویات خوراک اور کمبل نہ ہونے سے لوگو ں کو نمونیا ہوگیا یہ وہا ں کے ڈی سی او کی نااہلی کے باعث ہو انہیں معطل کیا جاچکا ہے پیپلز پارٹی کے مستقبل کے حوالے سے سابق وزیر نے کہا کہ لوگوں کے پاس سیکنڈ چوائس عمران خان تھی وہ بھی اب ختم ہوچکی ہے لو گ بلاول بھٹوزرداری کی طرف دیکھ رہے ہیں ،ہم نے حکومت کو فری ہینڈ دے رکھا ہے جلد ہی ہم گلی محلے کی سیا ست شروع کرنے والے ہیں لوگ ضرور پیپلز پارٹی کا ساتھ دیں گے گزشتہ الیکشن نہیں سلیکشن تھی ،نواز حکومت ڈیل کا نتیجہ ہے جس ڈیل میں کئی بڑے بڑے نا م شامل ہیں ،پنجاب کے سکولوں سے ماسٹر وں کی ڈیوٹیاںلگا کر بچے جمع کرنا کوئی کام نہیں

مزید : علاقائی