انصاف نہ ملنے پر خود سوزی کی کوشش کرنیوالی طالبہ دم توڑ گئی

انصاف نہ ملنے پر خود سوزی کی کوشش کرنیوالی طالبہ دم توڑ گئی
انصاف نہ ملنے پر خود سوزی کی کوشش کرنیوالی طالبہ دم توڑ گئی

  


مظفر گڑھ(مانیٹرنگ ڈیسک)مظفر گڑھ میں پولیس کی ناقص تفتیش کے باعث زیادتی کے ملزم رہا ہونے پر دلبرداشتہ ہوکر خودسوزی کرنیوالی طالبہ نشتر ہسپتال ملتان میں دم توڑ گئی ، مدعیہ کا موقف تھاکہ پولیس نے رشوت لے کر ملزموں سے ساز باز کرلی ۔ تفصیلات کے مطابق جتوئی کے علاقے بیٹ میر ہزار خان کی رہائشی اٹھارہ سالہ آمنہ بی بی کو 5جنوری کو پانچ ملزمان نے مبینہ اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا جس کا مقدمہ میر ہزار میں درج ہوا جس پر پولیس نے ایک نامزد ملزم نادر خان کو گرفتار کر لیا۔ ایک ماہ تفتیش کے بعد ملزم نادر کو پولیس نے مقدمے میں بے گناہ قرار دے دیا جس پر اانصاف کے حصول کے لئے دھک کھانے والی فرسٹ ائیر کی طالبہ آمنہ نے گذشتہ روز دلبرداشتہ ہو کر تھانہ کے داخلی دروازی کے سامنے خود پر تیل چھڑک کر آگ لگا لی جسے تحصیل ہیڈ کوارٹرز ہسپتال جتوئی منتقل کیا گیا جہاں ڈاکٹروں نے تشویشناک حالت کے باعث نشتر ہسپتال ملتان بھیج دیا۔پولیس کے مطابق مبینہ ملزم سے دوران تفتیش زیادتی ثابت نہ ہونے پر اسے بے گنا ہ قرار دیا گیا۔

مزید : مظفرگڑھ /اہم خبریں