ایل ڈی اے اتحاد مشعل یونین کا ہنگامی اجلاس

ایل ڈی اے اتحاد مشعل یونین کا ہنگامی اجلاس

  

لاہور (اپنے خبر نگار سے)لاہور ڈیویلپمنٹ اتھارٹی کی یونین(سی بی اے)کا پیریڈ25فروری2016کو ختم ہو گیا ہے اور ایل ڈی اے کی رجسٹرڈ یونینزبھی حرکت میں آگئی ہیں جن میں ایمپلائزویلفےئر یونین ایمپلائز یونین سٹاف یونین اتفاق یونین اور اتحاد مشعل یونین شامل ہین اسی سلسلے میں ایل ڈی اے اتحاد مشعل یونین کا ایک ہنگامی اجلاس زیر صدارت ظہور قادری جنرل سیکرٹری اتحاد یونین ہواجس میں ملک ندیم صدر چہرمین مرزا ناصر ڈپٹی سیکرٹری خالد سندھو فنانس سیکرٹری رانا یونس سرپرست اعلٰی پیر شیرازالحق شیرازی سرپرست حاجی محمد عباس بابا جی نائب صدر ندیم راجپوت رانا شجاع اظہر پٹواری اور وائس چہرمین واحد نواز نے شرکت کی اس موقعہ پر انہوں نے ایل ڈی اے کے ریفرنڈم کو چیلج کیا اور اگلے لائحہ عمل اختیار کرنے کے لئے مشاورت کی اس موقعہ پر انہوں نے کہا کہ جب 2010میں ایمپلائز کوتٹہ کی قرعہ اندازی کی گئی تھی اور ایل ڈی اے کے 1137ملازمین کو پلاٹ الاٹکئے گئے تھے جس کو بعد میں کینسل بھی کر دیا گیا تھا انہوں نے الزام عائد کیا کہ یہ قرعہ اندازی ایل ڈی اے کے ایک لیبر لیڈر نے کینسل کروائی تھی کیونکہ وہ اس وقت سی بی اے میں نہیں تھے اور وہ سٹاف یونین کے جنرل سیکرٹری ہیں جبکہ انہوں نے اس وقت کے جنرل سیکرٹری سی بی اے ایمپلائز یونین پر بھی کڑی تنقید کی اور کہا اگر وہ چاہتے تو 2010میں کی گئی قرعہ اندازی فعال ہو سکتی تھی کیونکہ یہ پنجاب گورنمنٹ اور ایل ڈی اے کی انتظامیہ کی مرضی اور منظوری سے ہی قرعہ اندازی ہوئی تھی مگر انہوں نے چپ سادھ لی اور خاموشی اختیار کی اس وقت اگر وہ چاہتے تو دفتر میں تالا بندی کر سکتے تھے وہ ایک صیح اور نیک کام کے لئے سب کچھ کر سکتے تھے ہمارے ہاں کتنے غیر اہم کام ہو جاتے ہیں یہ تو ملازمین کا حق تھا جو ان سے چین لیا گیا اور کوئی کچھ بھی نہ کر سکا انہوں نے مزید کہا کہ اگر ہمیں سی بی اے مل گئی تو ہم اللہ کے فضل سے ایسے تمام ایشوز کے لئے جان تک لڑا دیں گے انہوں نے بتایا کہ 16مارچ کو لیبر کورٹ نے تاریخ کا حوالے بلایا ہے جو بھی ریفرنڈم کی تاریخ ملے گی ہم ایل ڈی اے کے ملازمین کی خدمت میں حاضر ہو جائیں گے

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -