سرفراز مرچنٹ کی 15 مارچ کوایف آئی اے کے سامنے پیش ہونے سے معذرت

سرفراز مرچنٹ کی 15 مارچ کوایف آئی اے کے سامنے پیش ہونے سے معذرت
سرفراز مرچنٹ کی 15 مارچ کوایف آئی اے کے سامنے پیش ہونے سے معذرت

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) ایم کیو ایم کیخلاف منی لانڈرنگ کیس اور را سے فنڈنگ کے اہم گواہ سرفراز مرچنٹ نے 15 مارچ کوایف آئی اے کے سامنے پیش ہونے سے معذرت کرلی۔

تفصیلات کے مطابق ہفتہ کے روز ڈائریکٹرایف آئی اے لندن انعام غنی نے سرفراز مرچنٹ سے رابطہ کیا اور ایم کیو ایم کیخلاف تحقیقات میں تعاون مانگا تھا جس پر سرفراز مرچنٹ نے پیر کے دن اپنے وکلا سے مشاورت کے بعد جواب دینے کی حامی بھری تھی۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں۔

سرفراز مرچنٹ نے آج اپنے وکلا سے مشاورت کے بعد ایف آئی اے کو اپنا جواب بھجواتے ہوئے 15 مارچ کو پیش ہونے سے معذرت کرلی ہے۔ اپنے جواب میں سرفراز مرچنٹ کا کہنا تھا کہ ایم کیوایم اور قائد ایم کیوایم پر”را“سے پیسے لینے کا کوئی الزام نہیں لگایا بلکہ ایم کیو ایم رہنما محمد انور نے مجھے ” را“ سے فنڈنگ کے حوالے سے بتایا تھاایف آئی اے اپنے سمن میں ترمیم کرے اور ریکارڈ درست کرلے، جب تک ایف آئی اے تحقیقات کے تمام زاویوں کو درست سمت میں نہیں لاتی بیان ریکارڈ نہیں کراؤں گا۔

ایف آئی اے کو جواب جمع کرانے کے بعد سرفراز مرچنٹ نے نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ محب وطن پاکستانی کی حیثیت سے مکمل تعاون کروں گا اور تحقیقات میں تعاون کیلئے پاکستان آنا پڑا تو آؤں گا اور میرے پاس جو بھی معلومات ہیں وہ ملکی اداروں کو دوں گا۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاون لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں۔

انہوں نے کہا کہ ایف آئی اے کے خط پر میرا واحد اعتراض اس کی زبان اور پیش کرنے کا انداز ہے،یہ قومی سلامتی کا معاملہ ہے اس معاملے پر اعلی ترین سطح سے کارروائی ہونی چاہیے تھی، متحدہ کی قیادت پر الزام سکاٹ لینڈ یارڈ نے لگایا تھامیں نے یہ بات صرف بیان کی تھی۔اس بات سے واقف ہوں کہ ایم کیو ایم را سے رقوم لیتی ہے ، یہی بات سکاٹ لینڈ یارڈ نے بھی کہی اور سکاٹ لینڈیارڈ کی اس بات کا میں شاہد ہوں۔ سکاٹ لینڈیارڈ نے کہا تھاان کے پاس اس بات کے ثبوت ہیں کہ ایم کیو ایم را سے رقم لیتی ہے۔

گوالے کا روپ دھار کر کرپٹ لوگوں کیخلاف آپریشن کرنے والا شخص کون ہے؟ آپ بھی جانیے

واضح رہے کہ کراچی سے تعلق رکھنے والے سرفراز مرچنٹ کا کراچی اور دبئی میں پٹرولیم اور الیکٹرونکس میں بڑا کاروبار ہے ۔ انہوں نے مالی تنگی کے باعث 2012 میں ایم کیو ایم کو چندہ دیا جس کے بعد 2013 میں ایم کیو ایم کے ایک رہنما کو نقد قرضہ فراہم کیا جبکہ ایم کیو ایم لندن کے بینک اکاؤنٹس میں 50 لاکھ پاؤنڈ کی رقم ٹرانسفر کی تھی ۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -