مغربی ایشیا ء میں علاقائی امن کا انحصار وسیع ترتعاون پر ہے : جنرل باجوہ

مغربی ایشیا ء میں علاقائی امن کا انحصار وسیع ترتعاون پر ہے : جنرل باجوہ

راولپنڈی(مانیٹرنگ ڈیسک ) آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے ایران کے وزیر خارجہ جواد ظریف نے ملاقات کی۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ اور ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف کے درمیان ملاقات جی ایچ کیو راولپنڈی میں ہوئی جس میں علاقائی سکیورٹی صورتحال اور پاک ایران تعلقات کے امورزیر بحث آئے۔آرمی چیف نے ایرانی وزیر خا ر جہ سے گفتگو میں کہا خطے میں امن کا دارومدار مغربی ایشیائی ممالک کے تعاون میں ہے اور جرائم کی روک تھام کیلئے ہمیں ایک دوسرے کے تعاون کی ضرورت ہے۔ مغربی ایشیاء میں علاقائی امن کا انحصار وسیع تعاون پر ہے، جرائم کے خطرات کو ختم کرنے،سلامتی کیلئے باہمی تعا و ن کی ضرورت ہے، اس موقع پر ایرانی وزیر خارجہ نے حالیہ مہینوں میں دو طرفہ سکیورٹی انتظامات کی تعریف کی اور پاک ایران سرحد کی سکیورٹی بہتر بنانے کیلئے اقدامات کو بھی سراہا۔ آئی ایس پی آر کے مطابق بعدازاں چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ سے کر غز ستا ن کے چیف آف جنرل سٹاف میجر جنرل رحیم بردی نے ملاقات کی، جس میں باہمی تعلقات اور دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ ملا قا ت میں علاقائی سلامتی کی صورتحال اور دوطرفہ تعلقات کے فروغ پر بھی بات چیت کی گئی ،معزز مہمان کو جنرل ہیڈکوارٹرز آمد پر گارڈ آف آنر پیش کیا گیا، معزز مہمان نے یادگار شہداء پر پھو ل چڑھائے۔

جنرل باجوہ

اسلام آباد (آئی این پی) مشیر قومی سلامتی ناصر خان جنجوعہ سے ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف کی ملاقات میں پاکستان اور ایران کے بہتر ہو تے تعلقات پر اطمینان کا اظہار ، تعلقات کو مزید فروغ دینے کیلئے رکاوٹیں دور کرنے کی ضرورت پر زور، خطے میں پائیدار امن کیلئے تعا و ن پر مبنی فریم ورک پر کام کرنے کا اعادہ جبکہ دونوں ممالک کو لاحق مشترکہ خطرات اور مواقع کی نشاندہی بھی کی گئی۔ منگل کوہونے والی اس اہم ملاقات میں پاکستان میں ایران کے سفیر مہدی ہنر دوست نے بھی شریک تھے ملاقات میں دونوں ممالک کے مابین دو طرفہ تعلقات، علا قا ئی سلامتی کی صورتحال پر بھی تفصیلی گفتگو کی گئی۔

مزید : صفحہ اول