پنجاب حکومت مدرسہ جامعہ محمدیہ کو متبادل جگہ فراہم کرے، مولانا محب النبی

پنجاب حکومت مدرسہ جامعہ محمدیہ کو متبادل جگہ فراہم کرے، مولانا محب النبی

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر) پنجاب حکومت مدرسہ جامعہ محمدیہ کو متبادل جگہ فراہم کرے ورنہ ہم راست اقدام اٹھانے پر مجبور ہونگے، حکومت مدرسہ اور مسجد شہید کرنے کے بعد علماء و طلباء کو متبادل جگہ فراہم کرنے میں لیت ولعل سے کام لے رہی ہے جو کہ انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے ہمارا حکومت سے مطالبہ ہے کہ حکومت ہوش کے ناخن لے اور مدرسہ محمدیہ کے طلباء کو متبادل جگہ اور اس کی تعمیر کی ذمہ داری پوری کرے ان خیالات کا اظہار جمعیۃ علماء اسلام ضلع لاہور کے امیر مولانا محب النبی، سیکرٹری جنرل حافظ اشرف گجر، ضلعی ترجمان حافظ غضنفرعزیز، جمال عبد الناصر،شاہد اسرار، قاری محمد طاہر ، حافظ نصیر احمد احرار ودیگر نے جامعہ محمدیہ کے علماء وطلباء سے اظہار یکجہتی کرتے ہوئے کیا، انہوں نے کہا کہ اگر حکومت نے ڈیڈ لائن کے اندر اندر مسئلہ حل نہ کیا تو ہم لاہور بھر میں احتجاج پر مجبور ہونگے، اسلامی جمہوریہ پاکستان میں مساجد ومدارس محفوظ نہیں ہیں حکمران ہمیں احتجاج کا دائرہ بڑھانے پر مجبور نہ کریں ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1