ایوان بالا کی 38 قائمہ، فنکشنل و خصوصی کمیٹیوں کی تشکیل نو کا کام شروع

ایوان بالا کی 38 قائمہ، فنکشنل و خصوصی کمیٹیوں کی تشکیل نو کا کام شروع

اسلام آباد (صباح نیوز) ایوان بالا کی 38 قائمہ، فنکشنل و خصوصی کمیٹیوں کی تشکیل نو کا کام شروع کر دیا گیا۔ ہر سینیٹر چار کمیٹیوں کا رکن بن سکے گا۔ چیئرمین شپ کے لئے پاکستان پیپلزپارٹی اور پاکستان تحریک انصاف میں مفاہمت برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور باہمی مشاورت سے کمیٹیوں کی چیئرمین شپ تقسیم کی جائے گی۔ حکومتی اتحادیوں کو بھی حصہ ملے گا۔ ایوان بالا میں ارکان کی عددی تعداد کے مطابق پاکستان مسلم لیگ (ن) کو ایوان بالا کی قائمہ کمیٹیوں کی زیادہ چیئرمین شپ ملنی چاہئے تاہم پاکستان پیپلزپارٹی اور پاکستان تحریک انصاف کے درمیان مفاہمت کے نتیجے میں کمیٹیوں میں چیئرمینوں کے باضابطہ انتخابات کے ذریعے مسلم لیگ (ن) کو تنہا کرنے کا امکان ہے۔ سینیٹ سیکرٹریٹ نے اراکین سینیٹ سے قائمہ کمیٹیوں میں ان کی خواہشات کے بارے میں معلوم کرنے کی تیاری شروع کر دی ہے۔ ارکان کو باضابطہ طور پر خطوط ارسال کئے جائیں گے۔ سینیٹ سیکرٹریٹ ذرائع نے بتایا کہ کہ مئی 2018ء تک قائمہ کمیٹیوں کی تشکیل نو اور چیئرمینوں کے انتخابات کے تمام مراحل مکمل کر لئے جائیں گے۔ پاکستان تحریک انصاف اور پاکستان پیپلزپارٹی کے درمیان مفاہمت کے نتیجے میں اپنی عددی تعداد سے زیادہ چیئرمین شپ لینے کا امکان ہے۔

ایوان بالا

مزید : صفحہ آخر