ٹیکس نظام میں تبدیلی وقت کی اہم ضرورت ، تاجر برادری

ٹیکس نظام میں تبدیلی وقت کی اہم ضرورت ، تاجر برادری

لاہور( افضل افتخار) ملک میں موجودہ ٹیکس نظام میں تبدیلی وقت کی اہم ضرورت ہے او ر جب تک اس میں اصلاحات کرکے اس میں بہتری نہیں لائی جاتی اس وقت تک ملک میں یہ نظام ترقی نہیں کرے گا اور ملکی معثیت پر اس کے منفی اثرات ہی مرتب ہوں گے ان خیالات کا اظہار وزیر اعظم پاکستان عمران خان کی جانب سے ملک میں ٹیکس نظام میں بہتری لانے کے بیان پر تاجربراد ری نے روز نامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کیا اس حوالے سے اظہار خیال کرتے ہوئے انار کلی کے تاجروں نے وزیر اعظم کے اس بیان کا خیر مقدم کیا ہے اور اس حوالے سے ندیم بابر،خاور ریاض،نبیل ساجد،حامد اور ندیم نے کہا کہ پاکستان میں اس وقت ضرورت اس بات کی ہے کہ ٹیکس کے نظام میں بہتری لائی جائے اور اس کیلئے ایف بی آر کے نظام میں بہتری لانے کی ضرورت ہے او ر اب اس حوالے سے وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے بھی نوٹس لے لیا ہے جو ایک بہت اچھی بات ہے اور امید ہے کہ اب نظام کی بہتری کے لئے مستقبل قریب میں اقدامات بروئے کار لائیں جائیں گے جس سے ملک میں اس اصلاحات میں بہتری آئے گی اور اس سے تاجر برادی کو بھی فائدہ ہوگا امید ہے کہ اس حوالے سے جلد ہی اقدامات کئے جائیں گے اس حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے ساجد، خالد،بابر الرحمان،نذیر اور شاکر نے کہا کہ غریب تاجروں پر بہت بوجھ تھا ٹیکسوں کا اب امید ہے کہ اس حولے سے اقدامات کئے جائیں گے کیونکہ وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے بھی اس کا نوٹس لے لیا ہے اور یہ بہت اچھی بات ہے یہ ایک ایسا نظام تھا جس سے غریب تاجر سب سے زیادہ پس رہے تھے اور اب امید ہے کہ اس حوالے سے اقدامات ایسے کئے جائیں گے جس سے غریب تاجروں کوبھی بہت فائدہ ہوگا اس حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے نیلا گنبد کے تاجروں نے بھی اظہار خیال کیا اور کہا کہ پاکستان میں ٹیکسوں کا نظام بھی غلط ہے اور اس میں بہتری لانے کی اشد ضرورت ہے اور اب جب وزیر اعظم نے اس حوالے سے نوٹس لیا ہے ہم اس کا بھرپور خیر مقذم کرتے ہیں اور جس طرح سے اس حوالے سے غریب لوگوں کے مسائل پر بات کی گئی ہے اور اس کا بھی نوٹس لیا گیا ہے اس بات کا ثبوت ہے کہ اب مستقبل میں ٹیکس نظام میں ایسی اصلاحات کی جائیں گی جس سے یقینی طور پر غریب تاجروں پر بوجھ کم ہوگا اور اس سے ان کو فائدہ ہی حاصل ہوگا حکومت کی جانب سے اس اقدام کا بھرپور خیر مقدم کرتے ہیں اور امید ہے کہ اس حوالے سے اب جو بھی اقدامات کئے جائیں گے اس سے غریب تاجروں کو یقینی طور پر ریلیف ہی ملے گا۔

مزید : کامرس