سابق وزیر اور ریونیو افسران کیخلاف دائر اپیل پر جواب طلب

سابق وزیر اور ریونیو افسران کیخلاف دائر اپیل پر جواب طلب

پشاور (نیوز رپورٹر ) پشاور ہائی کورٹ کے جسٹس روح الامین اورجسٹس عبدالشکور پر مشتمل دورکنی بنچ نے سابق صوبائی وزیر مرید کاظم سمیت محکمہ ریوینو کے افسران کو نیب عدالت کی جانب سے دی گئی سزاؤں کیخلاف دائر اپیل پر چئیر مین نیب سے جواب طلب کرلیا ۔فاضل بنچ نے عبدالرحمان ایڈوکیٹ کی وساطت سے دائر اپیل کی سماعت کی جس میں انہوں نے موقف اختیار کیا ہے کہ ان کی موکلوں پر الزام ہے کہ انہوں نے ڈی آئی خان میں سرکار کی ملکیت 1976کنال اراضی کو غیرقانونی طریقے سے نیول ویلفئیر فیملیز آرگنائزیشن کو منتقل کی جبکہ محکمہ مال کے اہلکاروں اورافسران کو بطور رشوت 182کنال اراضی بھی الاٹ کی گئی انہوں نے عدالت کو بتایاکہ بعد میں یہ زمین صوبائی حکومت کو واپس بھی کردی گئی تھی تاہم نیب نے عدالت میں جاری کیس کی سماعت جاری رکھی اور 20فروری 2019کو ملزمان کی جانب سے ان کی جیل میں گزاری گئی قید کو کافی قراردیدی حالانکہ ملزمان نے کوئی جرم ہی نہیں کیا اورتمام امور قانون کے مطابق سرانجام پائیں اس کے ساتھ ساتھ جس زمین کو متنازعہ بنایاگیا وہ واپس صوبائی حکومت کومل بھی گئی تھی جس کے بعد نیب ریفرنس منسوخ تصور ہوتا مگر ایسانہیں کیاگیا اوران افراد کو سزاد دی گئی ۔عدالت نے دلائل سنننے کے بعد چئیرمین نیب سے جواب مانگ لیا ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر