بادامی باغ ، عطائی ڈاکٹرنے 4سالہ بچی کو غلط انجکشن لگا کر قبر میں پہنچادیا

بادامی باغ ، عطائی ڈاکٹرنے 4سالہ بچی کو غلط انجکشن لگا کر قبر میں پہنچادیا

لاہور(خبرنگار )بادامی باغ کے علاقے میں مبینہ طور پر غلط انجکشن لگنے سے 4 سالہ بچی جاں بحق ہوگئی۔اطلاع ملنے پر پولیس نے لاش کو پوسٹ مارٹم کے لیے منتقل کرکے عطائی ڈاکٹر کو گرفتار کرکے بچی کے نانا کی مدعیت میں مقدمہ درج کر لیا۔ تفصیلات کے مطابق بادامی باغ کے علاقے امام بخش کا رہائشی رئیس احمد اپنی نواسی 4 سالہ فاطمہ کو کھانسی اور ریشہ ہونے کی وجہ سے دوائی لینے کے لیے حنیف کے نجی کلینک پرلے گیا ۔جہاں عطائی ڈاکٹرنے بچی کو انجکشن لگا دیا۔ جس کی وجہ سے بچی کی حالت غیر ہو گئی ۔جسے تشویشناک حالت میں ہسپتال منتقل کیا گیا۔ جہاں ڈاکٹروں نے اس کی موت کی تصدیق کردی۔ اطلاع ملنے پر پولیس نے موقع پر پہنچ کر لاش کو قبضے میں لے کر ایدھی ایمبولینس کے ذریعے پوسٹ مارٹم کے لیے منتقل کردی۔ بچی کے نانا کی مدعیت میں عطائی ڈاکٹر کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔

مزید : علاقائی