محکمہ صحت ٹھیکے پر دیئے گئے ہسپتال کمپنیوں اور ٹھیکیداروں سے فوری واگزار کروائے: پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن

محکمہ صحت ٹھیکے پر دیئے گئے ہسپتال کمپنیوں اور ٹھیکیداروں سے فوری واگزار ...
محکمہ صحت ٹھیکے پر دیئے گئے ہسپتال کمپنیوں اور ٹھیکیداروں سے فوری واگزار کروائے: پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن

  

لاہور (صباح نیوز)محکمہ صحت ٹھیکے پر دیئے گئے اپنے ہسپتال کمپنیوں اور ٹھیکیداروں سے فی الفور واگزار کروائے کیونکہ ان ہسپتالوں میں مقررہ تعداد سے انتہائی کم ہیلتھ کیئر پروائیڈرز سے ڈنگ ٹپاؤ طریقے سے کام چلایا جا رہا ہے اور عوام الناس کی نام نہاد گڈ گورننس کے نام پر تذلیل کی جا رہی ہے۔

ان خیالات کا اظہار پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کے ایک اجلاس میں کیا گیا جس کی صدارت پروفیسر محمد اشرف نظامی نے کی۔ اجلاس میں جنرل سیکریٹری ڈاکٹر ملک شاہد شوکت، ڈاکٹر اظہار احمد چوہدری، ، ڈاکٹر تنویر انور، اجمل نقوی، ڈاکٹر سکندر حیات گوندل، ڈاکٹر احمد نعیم اختر، ڈاکٹرارم شہزادی، ڈاکٹر علیم نواز، ڈاکٹر واجد علی اور ڈاکٹر بشریٰ حق نے شرکت کی۔ عہدیداران نے مزید کہا کہ یہ حقیقت ہے کہ نرسنگ اسسٹنٹ کو نرس کا اختیار نہیں دیا جا سکتا اور یہ بے اصولی ان ٹھیکے پر دیئے گئے ہسپتالوں میں جاری و ساری ہے اور 6 نرسوں کی جگہ ایک نرس اور 6ڈاکٹروں کی جگہ ایک ڈاکٹر سے کام چلایا جا رہا ہے جبکہ حکومت سے ان ہسپتالوں کا پورا بجٹ بھی لیا جا رہا ہے اور یہ ہسپتال ، اُن کی عمارات، اُن کے آلات بھی حکومت کے ہیں اور ٹھیکے پر دیئے گئے ہسپتالوں کے ٹھیکیدار صرف نام نہاد گڈ گورننس بیچ رہے ہیں۔عہدیداران نے وزیراعلیٰ سے مطالبہ کیا ہے کہ ٹھیکیداروں سے اِن ہسپتالوں کوفی الفور واپس لیا جائے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور