پالیمنٹ بے توقیر اور عوام بے مدد گار: فائق شاہ

پالیمنٹ بے توقیر اور عوام بے مدد گار: فائق شاہ

  



پشاور(سٹی رپورٹر) امن ترقی پارٹی کے چیئرمین محمد فائق شاہ نے قومی اسمبلی سے وزیر اعظم اور اپوزیشن لیڈر کی غیر حاضری پر سخت رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ دونوں شخصیات ذاتی انا اور مفاد میں لگے ہیں،قائد حزب اختلاف لندن کی سڑکوں پر اور قائد حزب اقتدار بنی گالا اور وزیر اعظم ہاؤس میں گھوم رہے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے مرکزی ایگزیکٹو کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔،اجلاس میں محمد اویس خان،منصور قیصر چوہان، بشیر احمد، ارسلان شاہ،طلحہ احمد چٹھہ، اشتیاق الٰہی و دیگر نے شرکت کی۔ محمد فائق شاہ نے کہا کہ پارلیمنٹ کے اجلاس پر عوام کے ٹیکسوں سے بھاری پیسہ خرچ ہو رہا ہے مگر اس کی آئینی،جمہوری اور عوامی حیثیت کو بے توقیر کر دیا گیا ہے وزیر اعظم کا کام پارلیمنٹ کے ذریعے عوام اور عوامی نمائندوں کو اعتماد میں لینا ہوتا ہے جبکہ اپوزیشن لیڈر کی ذمہ داری دُگنی ہو جاتی ہے کہ وہ عوامی دُکھ درد کا پاسدار اور حکومت کا درست ناقد ہوتا ہے، ان دونوں شخصیات کی عدم شرکت سے باقی ممبران، وزراء اور دیگر جماعتوں پیپلز پارٹی، جے یو آئی اور ن لیگی ممبران غائب رہتے ہیں ملک کی کسی پالیسی یا اقدام پر بحث ہوتی ہے اور نہ قانون سازی کا عمل مکمل ہوتا ہے عوام کا اعتماد جمہوریت اور جمہوری اداروں سے اُٹھ رہا ہے امن ترقی پارٹی سخت محاسبہ کر کے عوامی اعتماد بحال کرے گی، اُنہوں نے اجلاس میں مشترکہ قرارداد کے ذریعے الیکشن کمیشن، سپیکر اور سپریم کورٹ سے مطالبہ کیا کہ قائد حزب اقتدار اورقائد حزب اختلاف کے خلاف کارروائی کی جائے، تمام آئینی ادارے اپنا آئینی فرض پورا کرتے ہوئے کردار ادا کریں اجلاس نے ایک مشترکہ قرارداد کے ذریعے میڈیا کی آزادی، پٹرولیم مصنوعات کی کمی اور گندم کی قیمت 15سو مقرر کرنے کا مطالبہ کیا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر