بنوں،نیو سبزی منڈی مسائل کی آماجگاہ بن گئی

بنوں،نیو سبزی منڈی مسائل کی آماجگاہ بن گئی

  



بنوں ( بیورورپورٹ)بنوں کی سب سے بی تجارتی منڈی نیوز سبزی منڈی مسائل کی آماجگاہ بن گئی منڈی کی سالوں سے صفائی نہ ہونے اور نکاسی آب کا انتظام نہ ہونے کی وجہ سے بارش کی صورت میں منڈی کیچڑ میں تبدیل ہوجاتی ہے جگہ جگہ گندا پانی کھڑا ہونے،گندگی کے ڈھیروں اور کیچڑ کے ڈھیر وں کی وجہ سے منڈی میں کاروبار کرنے والے آڑھتیوں،کمیشن ایجنٹس،مزدوروں اور عوام کو شدید مشکلات کا سامناکرنا پڑتا ہے نیو سبزی منڈی فیڈریشن کے جنرل سیکرٹری حاجی ملک فلک ناز خان، ویجی ٹیبل ایسوسی ایشن کے صدر منے پیر اور جنرل سیکرٹری محمد اسلام خان نے میڈیا کے نمائندوں کو تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ نیو سبزی منڈی بنوں میں پاکستان کے چاروں صوبوں کے علاوہ افغانستان سے بھی میوہ اور سبزیاں لائے جاتے ہیں ارو روزانہ کی بنیاد پر کروڑوں روپے کا کاروبار ہوتا ہے لیکن بد قسمتی سے جتنی بڑی منڈی ہے اتنے ہی مسائل کا شکار ہے منڈی میں کوئی پولیس چوکی نہیں ہے،کسی بینک کا کوئی برانچ نہیں ہے،پینے کا صاف پانی میسر نہیں ہے انہوں نے کہا کہ منڈی میں نکاسی آب کا نظام نہیں ہے صفائی کیلئے کوئی عملہ نہیں آتا ہے ٹی ایم اے سے رابطہ کرتے ہیں تو جواب ملتا ہے کہ ہمارے پاس نیو سبزی منڈی کی صفائی کیلئے عملہ اور وسائل نہیں ہے ڈبلیو ایس ایس سی بنوں سے رابطہ کرتے ہیں تو جواب ملتا ہے کہ منڈی ہمارے دائرہ اختیار میں نہیں ہے جبکہ کرائے اور ٹیکس میونسپل کمیٹی ٹی ایم اے بنوں والے وصول کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ جہاں گندے پانی اور کیچڑ کی وجہ سے تاجروں اور عوام کو آمدورفت میں مشکلات کا سامنا ہے وہاں مہلک بیماریاں پھیلنے کا بھی خطرہ ہے لہذا انہوں نے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان،ڈپٹی کمشنر بنوں کیپٹن ریٹائرڈ زبیر خان نیازی اور تمام ذمہ دار حکام سے مطالبہ کیا کہ نیو سبزی منڈی میں نکاسی آب کا نظام بنایا جائے صفائی کیلئے فوری طور پر عملہ تعینات کیا جائے ورنہ چار سو دکانات کے مالکان کرایہ دینے سے انکار کرنے اور بنوں ڈی آئی خان روڈ کو مطالبات کے حق میں بند کرنے پر مجبور ہوجائیں گے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر