مسلم لیگ ن کرونا وائرس خطرات کے پیش نظر پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس بلانے کا مطالبہ

      مسلم لیگ ن کرونا وائرس خطرات کے پیش نظر پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس بلانے ...

  



اسلام آباد (این این آئی،مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستان مسلم لیگ (ن) ترجمان مریم اور نگزیب نے پارلیمانی پارٹی کے فیصلوں کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ کرونا وائرس کے خطرات کے پیش نظر پارلیمینٹ کا مشترکہ اجلاس بلایا جائے،وزیراعظم عمران خان وزیر صحت بھی ہیں، پارلیمینٹ میں آکر کرونا وائرس کی صورتحال پر جواب دیں۔تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ (ن) کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس اپوزیشن چیمبر میں منعقد ہوا جس میں شاہد خاقان عباسی، احسن اقبال، رانا ثناء اللہ سمیت دیگر رہنماء شریک ہوئے۔مریم اورنگزیب کے مطابق پارلیمینٹ کا مشترکہ اجلاس بلانے کیلئے سپیکر قومی اسمبلی کو درخواست جمع کرادی گئی۔ پارلیمانی پارٹی کے اجلاس نے کہاکہ پوری دنیا میں لاک ڈاؤن ہے، پاکستان میں حکومت بدستور سوئی ہوئی ہے۔اجلاس میں میرشکیل الرحمن کی گرفتاری کے خلاف مشترکہ اپوزیشن کا ہائیکورٹ میں آج ہفتہ کو پٹیشن دائر کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں کہاگیاکہ نیب کے اختیارات غلط استعمال کرنے سے متعلق ہائی کورٹ کے فیصلے کی سیاہی خشک نہیں ہوئی تھی کہ میڈیا پر شب خون مارا گیا۔ بیان میں کہاگیاکہ میڈیا پرسنز کی گرفتاریاں، جبر، دباؤ اور انتقامی کارروائیاں آئین، بنیادی حقوق کی سنگین خلاف ورزی ہے۔جبکہ خواجہ آصف کی جانب سے سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کو لکھے گئے خط میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ دنیا بھر میں 1 لاکھ 25 ہزار سے زائد افراد کرونا وائرس سے متاثر جبکہ 4 ہزار 600 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔سینئر لیگی رہنما نے مطالبہ کیا ہے کہ پاکستان میں موثرحکمت عملی نہ ہونے سے خطرناک وائرس کے پھیلنے کا شدید خطرہ ہے، بحرانی صورتحال میں موثر اقدامات نہ اٹھانا سنگین جرم ہے لہٰذا اس خطرناک صورتحال کے پیش نظر پارلیمینٹ کا مشترکہ اجلاس بلایا جائے۔پارلیمانی پارٹی اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ (ن)لیگ کی قیادت شہباز شریف کریں گے کیونکہ وہ پارٹی کے صدر ہیں۔انہوں نے کہا کہ کرونا وائرس کا مسئلہ قومی مسئلہ ہے اس سے نمٹنے کے لیے اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے۔اس موقع پر محسن شاہنواز رانجھا نے کہا کہ حکومت کرونا کے خلاف اقدامات نہیں کر پائی۔مسلم لیگ ن کی پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں عوامی ایشوز کو پارلیمنٹ کے اندر اور باہر اٹھانے کا فیصلہ کیا گیا۔

مسلم لیگ ن

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) حکمران جماعت تحریک انصاف کی بڑی وکٹ گرگئی،تلہ گنگ سے سینئر سیاستدان اورسابق رکن قومی اسمبلی منصور حیات ٹمن نے باضابطہ مسلم لیگ (ن)میں شمولیت کا اعلان کر دیا۔تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ (ن)کے سینئر رہنماؤں شاہد خاقان عباسی،احسن اقبال،مریم اورنگزیب،رانا ثناء اللہ،مرتضیٰ جاوید عباسی،ملک ابرار،طارق فضل چوہدری، سینیٹر جنرل(ر)عبدالقیوم، رکن قومی اسمبلی ملک سہیل کمیڑیال،آفتاب شیخ ودیگر تلہ گنگ سے سینئر سیاستدان اورسابق رکن قومی اسمبلی منصور حیات ٹمن کی رہائش گاہ پر گئے،جہاں پر منصور حیات ٹمن نے تحریک انصاف چھوڑ کر باضابطہ مسلم لیگ (ن)میں شمولیت کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ شاہد خاقان عباسی اور احسن اقبال کو بھائی سمجھتا ہوں، پہلے دوست تھے پھر بھائی بنے اور اب لیڈر بھی ہیں،شہباز شریف صاحب سے ملاقات ہوچکی تھی،مسلم لیگ ن نے رہنماؤں نے جواں مردی سے جیل کاٹی، نواز شریف اور شہباز شریف کا سپاہی بن کر پارٹی کے لیے کام کروں گا۔

منصور حیات ٹمن

مزید : صفحہ اول