کرونا وائرس،آئی جی کا احتیاطی تدابیر پر عملدرآمد کا حکم

  کرونا وائرس،آئی جی کا احتیاطی تدابیر پر عملدرآمد کا حکم

  



لا ہو ر (کر ائم رپو رٹر)انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب شعیب دستگیر نے کرونا وائرس سے بچاؤ اور بڑھتے خطرات کے پیش نظر احتیاطی تدابیر پر سختی سے عمل درآمد یقینی بنانے کی ہدایات جاری کی ہیں تاکہ پولیس دفاتر اور فیلڈ میں عوام کی جان وما ل کے تحفظ کے فرائض سر انجام دینے والے افسران و اہلکار خود کو اس وائرس سے محفوظ ر کھ سکیں۔ آئی جی پنجاب کی ہدایت پر ڈی آئی جی ویلفیئر شارق کمال صدیقی نے صوبے کے تمام آر پی اوز، سی پی اوز، ڈی پی اوز اور یونٹ سربراہان کو مراسلہ بھجوادیا ہے۔

جس میں کورونا وائر س سے بچاؤ کی احتیاطی تدابیر تفصیلا درج ہیں۔مزید برآں سنٹرل پولیس آفس میں پولیس ملازمین کو کورونا ملازمین سے محفوط رکھنے کیلئے آگاہی تقریب کا انعقاد کیا گیا جس میں ایڈیشنل آئی جی آپریشنز انعام غنی نے پولیس ملازمین کو احتیاطی تدابیر کے متعلق تفصیلی طور پر آگا ہ کرتے ہوئے ان پر عمل درآمد یقینی بنانے کی تاکید کی۔ اس موقع پر ایڈیشنل آئی جی آئی اے بی اظہر حمید کھوکھر، اے آئی جی ایڈمن انورکھیتران سمیت سنٹرل پولیس آفس کے تمام شعبوں کے ملازمین کی بڑی تعداد موجود تھی۔ایڈیشنل آئی جی آپریشنز نے ملازمین سے خطاب کرتے ہوئے بتایاکہ وہ کھانسی، نزلہ، زکام اور بخار کی صورت اپنے ناک اور منہ کو سرجیکل ماسک سے ڈھانپ کر رکھیں، ایک دوسرے سے مصافحہ کرنے اورگلے ملنے سے پرہیز کریں۔قریبی میل جول سے اجتناب کریں۔ جو شخص زکام اور کھانسی میں مبتلا ہو اس سے تین فٹ کا فاصلہ رکھیں، غیر ضروری طور پر پر ہجوم جگہوں پر جانے سے پرہیز کریں۔ہاتھ کو ناک، منہ اور آنکھوں پر چھونے سے گریز کریں۔ یہ وائرس ناک، منہ اور آنکھ کے ذریعے انسانی جسم میں داخل ہوتا ہے۔ اپنے ہاتھ کثرت سے صابن سے دھوئیں او ر کم از کم 20سیکنڈ کیلئے دھوتے رہیں۔ ہاتھوں کو صاف ستھرا اور جراثیم سے محفوظ رکھنے کیلئے سینیٹائزر کا استعمال بھی کریں۔ پبلک ٹرانسپورٹ پر سفر کرتے وقت وہاں لگے ہینڈلز وغیر ہ کو چھونے سے گریز کریں اورہاتھوں پر دستانے پہن کر رکھیں۔ اپنے استعمال کی گاڑی اور سٹئیرنگ کو صرف ایک مستعمل شخص کیلئے مختص رکھیں۔ کچھ عرصے کیلئے بائیو میٹرک حاضری بند کردیں۔نیم گرم پانی کا استعمال کریں، دروازوں، سیڑھیوں کی ریلنگ اور لفٹ کے بٹن کو چھونے سے گریز کریں اور دستانوں کا لازمی استعمال کریں۔ دفاتر کے کمروں میں کھڑکیاں کھول کر رکھیں اور تازہ ہوا کے اندراج کو یقینی بنائیں۔ بیت الخلا ء کو صاف اور خشک رکھیں اور ہاتھ دھونے کے عمل کو یقینی بنائیں۔ تمام تھانوں، دفاتر اور پولیس لائنز کے بیت الخلاء میں سینیٹائزر کی موجودگی کو یقینی بنائیں اور ہاتھ، منہ دھونے کے عمل کو متعدد بار دہرائیں۔ غسل خانوں میں تولئے کے استعمال سے گریز کریں اور اس کی جگہ ٹشو پیپر کا استعمال کریں اور اسے استعمال کے بعد مناسب طریقے سے تلف کردیں۔ تمام افسران و اہلکار اپنی جیب میں سینیٹائزر رکھنے اورا ستعمال کرنے کی عادت کو شعار بنائیں۔ جس شخص کو نزلہ اور زکام ہو اس کو ماسک پہننا چاہئیے اور اس ماسک کا استعمال ایک دن سے زیادہ نہ کریں اور خیال رکھیں کہ اس ماسک کو الٹا نہ پہنیں۔زکام اور بخار کی صورت میں فورا ڈاکٹر سے رجوع کریں۔ اس بیماری کی علامات بخار، زکام، کھانسی او رسانس لینے میں دشواری ہے اس بیماری کی سنگین حالت میں نمونیہ کی علامات کا ظاہر ہونا ہے جو شدید تنفس سنڈروم اور گردوں کے فیل ہونے کا باعث بنتا ہے۔ ایسی علامات ظاہر ہونے پرفوری طور پرقریبی مستند ڈاکٹر سے رجوع کریں۔ تازہ پھلوں کا استعمال کریں۔ احتیاط سے کورونا وائرس (COVID-19)سے بچا جا سکتا ہے۔یہی ہدایات سنٹرل پولیس آفس کی جانب سے بذریعہ مراسلہ تمام ریجنل و ضلعی افسران اور یونٹ سربراہان کو بھی بھجوا دی گئی ہیں جبکہ ان ہدایات اور لف شدہ تصویری نمونے کو تمام پولیس دفاتر، پولیس اسٹیشنزاور پولیس لائنز پرنمایاں آویزاں کرنے اور صبح شام کی گنتی میں پڑھ کر سنانے کا حکم دیا گیا ہے۔

مزید : علاقائی