بھارت میں بی جے پی حکومت کے عزائم سے عالمی امن کو خطرہ لاحق، امریکی اخبار

  بھارت میں بی جے پی حکومت کے عزائم سے عالمی امن کو خطرہ لاحق، امریکی اخبار

  



سرینگر(این این آئی)امریکی اخبار ”نیویارک ٹائمز“ نے بھارتی دارلحکومت نئی دلی میں ہونے والے حالیہ مسلم کش فسادات سے متعلق اپنی ایک رپورٹ میں لکھا ہے کہ فسادات کے دوران پولیس نے بھی دانستہ طور پر مسلمانوں کو نشانہ بنایا۔ نیویارک ٹائمز نے لکھا کہ شواہد اس بات کا پتہ دیتے ہیں کہ فسادات کے دوران پولیس نے دانستہ طور پر مسلمانوں کو نشانہ بنایا، مسلمانوں اور انکے گھروں کو نشانہ بنانے میں نئی دلی پولیس نے بھی کردار ادا کیااور متحرک طریقے سے ہندو ہجوم کی مدد کی۔ دلی پولیس کی کئی ویڈیوز منظر عام پر آئیں جن میں اسے مسلمانوں پر حملہ کرتے ہوئے دیکھاگیا۔ نریندر مودی کی سربراہی میں قائم بھارتیہ جنتاپارٹی کی حکومت نے پولیس کو سیاست زدہ کر دیا ہے۔ رپورٹ میں بھارتی پارلیمنٹ کے سابق رکن شاہد صدیقی کا حوالہ دیتے ہوئے لکھا گیا کہ بھارت کی پولیس انتہائی نوآبادیاتی ذہن اور ذات پات والی ہے۔ پولیس کا رویہ کمزور کی طرف ہمیشہ زیادہ تشدد اور غصے پر مبنی ہوتا ہے۔ہندو انتہا تنظیموں کے کارکنوں نے اس دوران مسلمانوں کے قتل عام کے علاوہ انکے گھروں، دکانوں اور دیگر املاک کو نذر آتش کر دیا تھا۔ مساجد کی بھی بڑے پیمانے پر بے حرمتی کی گئی تھی۔بھارت میں بی جے پی کی فسطائی حکومت کے مسلم دشمن عزائم سے عالمی امن کو خطرہ لاحق ہے۔ عالمی برادری کو بھارت میں مسلمانوں کا قتل عام رکوانے اور دلی فسادات میں ملوث ہندوانتہاپسندوں کے خلاف سخت کارروائی کیلئے بھارتی حکومت پر دباؤ بڑناھانا چاہیے۔ یاد رہے کہ نئی دلی میں انتہا پسند ہندو گروپوں کی طرف سے مسلم مخالف فسادات کے دوران 50کے قریب افرادکے قتل اور 250 سے زیادہ زخمی ہوگئے تھے۔

مزید : صفحہ اول