لاہور ڈویژن میں ٹیکس ریکوری کے اہداف پورے نہ ہو سکے

    لاہور ڈویژن میں ٹیکس ریکوری کے اہداف پورے نہ ہو سکے

  



لاہور(اپنے نمائندے سے)پنجاب میں اشٹام ڈیوٹی، رجسٹریشن فیس اور سی وی ٹی کی 23 سالہ آڈٹ رپورٹ مکمل کر لی گئی، انسپکٹوریٹ آف سٹیمپس آڈیٹرز نے 1996 سے 2019 کی آڈٹ رپورٹ سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو پنجاب کوپیش کردی۔ تفصیلات کے مطابق بورڈ آف ریونیو کے شعبہ رجسٹریشن برانچ کے عملے کی جانب سے کروڑوں روپے مالیت کی زیر التواء ریکوری کی وصولی تا خیر کا شکار ہو گئی۔لاہور ڈویژن صوبہ کی 9 ڈویژن کے مقابلے میں سب سے زیادہ ریکوری ہونے کے باوجود دیے گئے اہداف پورے نا کر سکا لاہور ڈویژن میں 64 کروڑ 38 لاکھ روپے کی بھاری مالی کوتاہیوں کا انکشاف سامنے آگیا۔سال 2019-20کی مرتب کردہ رپورٹ کے مطابق صرف ریکوری کی مد میں 12 کروڑ 12 لاکھ 70 ہزار وصول ہو سکے جبکہ 3کروڑ 30 لاکھ 69 ہزار کی رقوم کی واپسی پائپ لائن میں ڈال دی گئی۔48 کروڑ 64 لاکھ 44 ہزار روپے کی رقوم تاحال وصول نہ ہو سکیں رپور ٹ میں لاہور، قصور، ننکانہ اور شیخوپورہ کو شامل کیا گیا ہے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1