بہترین سکیورٹی نے کرکٹرز کے خدشات کلین بولڈ کردیے، عمران طاہر

بہترین سکیورٹی نے کرکٹرز کے خدشات کلین بولڈ کردیے، عمران طاہر

  



لاہور(سپورٹس رپورٹر) سابق جنوبی افریقی لیگ سپنر عمران طاہرنے کہا ہے کہ پاکستان میں بہترین سیکیورٹی نے غیر ملکی کرکٹرز کے خدشات کلین بولڈ کردیے، سب انتظامات پر مطمئن اور اپنے قیام سے لطف اندوز ہورہے ہیں۔اپنے ایک انٹرویو میں عمران طاہر نے کہا کہ میں چند برس قبل ورلڈ الیون کے ساتھ پاکستان آیا تھا،دوسری بار آمد میرے اور فیملی کیلیے خوشی کی بات ہے،لاہور میں سکونت پذیر خاندان کو مجھے نظروں کے سامنے ایکشن میں دیکھنے کے زیادہ مواقع نہیں ملتے،اب وہ میچ دیکھنے کے علاوہ ہوٹل میں ملاقات کیلیے بھی آرہے ہیں۔پی ایس ایل کی فرنچائز ملتان سلطانز میں شامل جنوبی افریقی کرکٹر نے کہا کہ میں نے پاکستان میں خود کو کبھی غیر محفوظ محسوس نہیں کیا، پاکستانی ہونے کے ناطے میرے جذبات بھی مختلف ہیں لیکن غیر ملکی کھلاڑیوں کے خدشات بھی ختم ہوگئے،وہ سیکیورٹی کو اعلی درجے کی قرار دے رہے ہیں، سب انتظامات سے مطمئن اور اپنے ٹور سے بھرپور انداز میں لطف اندوز ہورہے ہیں۔انھوں نے کہا کہ اپنے برانڈ کی قدر و قیمت زیادہ ہوتی ہے،پوری پی ایس ایل کا یواے ای سے منتقل ہونا ملک کیلیے ایک بہت بڑا قدم ہے،اعلی معیار کی وجہ سے تمام کرکٹرز پی ایس ایل کو مشکل ترین لیگز میں سے ایک قرار دیتے ہیں۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی