خواجہ فرید یونیورسٹی آف انجینئرنگ میں تین روزہ تربیتی ورکشاپ

  خواجہ فرید یونیورسٹی آف انجینئرنگ میں تین روزہ تربیتی ورکشاپ

  



رحیم یارخان(بیورورپورٹ)خواجہ فرید یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈانفارمیشن ٹیکنالوجی میں بزنس کے رحجان کے فروغ کیلئے تین روزہ تربیتی ورکشاپ کاانعقاد‘یونیورسٹی(بقیہ نمبر40صفحہ12پر)

کے تحقیق اور کمرشلائزیشن کے ڈیپارٹمنٹ ORIC کے زیر انتظام منعقدہ اس ورکشاپ کامقصد طلباء وطالبات کو بزنس کرنے کے فوائد‘جدید رحجانات اورکامیاب رہنے کیلئے ضروری پہلوؤں کی تربیت دیناتھا۔ اس ورکشاپ میں یونیورسٹی کے ان طلباء وطالبات کی شرکت قابل ذکر تھی جنہوں نے دوران تعلیم اپنے کاروباری آئیڈیازاورپراجیکٹس کو قومی اور بین الاقوامی مقابلوں میں خواجہ فرید یونیورسٹی کی نمائندگی کرتے ہوئے پیش کیا اور نمایاں پوزیشنز کے ساتھ ساتھ انعامات جیتے۔ ورکشاپ میں ماہرین نے نوجوانوں کو اپنا کاروبارشروع کرنے کے لیے ضروری پہلوؤں بشمول آئیڈیا کی جدت،قابل عمل کاروبار، ماحول اورمارکیٹ کاتجزیہ،مارکیٹنگ، سیلز اورہیومن ریسورس جیسے اہم عنوانات بارے مفصل تربیت دی گئی۔اس موقع پرورکشاپ کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے خواجہ فرید یونیورسٹی کے وائس چانسلرپروفیسر ڈاکٹرمحمدسلیمان طاہر نے منتظمین کی کاوشوں کو سراہا اوراس ورکشاپ کو نہ صرف رحیم یارخان بلکہ جنوبی پنجاب کیلئے اہم سنگ میل قراردیا۔ان کاکہناتھاکہ ہمارے فارغ التحصیل طلباء وطالبات کو نوکری ڈھونڈنے کی بجائے اپنے کاروبارپرزیادہ توجہ دینی چاہیے کیونکہ ہمارا مذہب بھی کاروبارکوفوقیت دیتاہے اورجدید دنیا بھی اس کی جانب گامزن ہے۔اپنے خطاب میں ڈائریکٹرORIC ڈاکٹرسیف الرحمن نے ورکشاپ کے انعقاد پرمہیاکی گئی رہنمائی اورمعاونت پروائس چانسلرکاشکریہ اداکیا اورشرکاء پرزوردیاکہ مطلوبہ مقاصد ضرور حاصل کریں۔خواجہ فریدیونیورسٹی کے ہونہار طلباء وطالبات نے گزشتہ چند مہینوں میں قومی اوربین الاقوامی سطح پرمنعقدہ مقابلوں میں نمایاں پوزیشن حاصل کرکے نہ صرف یونیورسٹی بلکہ خطے کانام روشن کیاہے۔حال ہی میں الیکٹریکل انجینئرنگ ڈیپارٹمنٹ کے سٹوڈنٹس اریبہ شبیر، انیسہ عباس اور رسول حمزہ نے کامسیٹ اسلام آباد میں منعقدہ DICE2020 کے مقابلے میں 425 ٹیموں میں نمایاں طورپران 30ٹیموں میں جگہ بنائی ہے جن کو لمزیونیورسٹی لاہورمیں 6ماہ کی تربیت بین الاقوامی ماہرین سے دلائی جائے گی۔دیگرہونہار طلباء جوماضی قریب میں یونیورسٹی کافخرثابت ہوئے ہیں ان میں مینجمنٹ سائنسز کے طلباء وطالبات قابل ذکر ہیں۔

ورکشاپ

مزید : پشاورصفحہ آخر