کابل انتظامیہ پیشہ ور مجرم رہا کررہی ہے، مقید طالبان نہیں، طالبان کی رہائی سے قبل ہم یہ کام کروائیں گے، افغان طالبان کے ترجمان نے اعلان کردیا

کابل انتظامیہ پیشہ ور مجرم رہا کررہی ہے، مقید طالبان نہیں، طالبان کی رہائی ...
کابل انتظامیہ پیشہ ور مجرم رہا کررہی ہے، مقید طالبان نہیں، طالبان کی رہائی سے قبل ہم یہ کام کروائیں گے، افغان طالبان کے ترجمان نے اعلان کردیا

  



کابل(آئی این پی)افغان طالبان کے ترجمان سہیل شاہین نے کہا ہے کہ قیدیوں کی رہائی سے قبل طالبان وفد اپنے قیدیوں کی تصدیق کرے گا، کابل انتظامیہ جن کو رہا کر رہی ہے وہ پیشہ ور مجرم ہیں مقید طالبان نہیں،طالبان قیدیوں کی تصدیق کے

لئے 34افراد پر مشتمل گرینڈ جرگہ تچشکیل دے دیا گےا ہے۔ترجمان طالبان سہیل شاہین نے بی بی سی اردو کو بتایا کہ کابل انتظامیہ جن 1500 قیدیوں کو رہا کر رہی ہے وہ جرائم پیشہ افراد ہیںاورجو فہرست انھوں نے کابل انتظامیہ کو دی تھی یہ وہ قیدی نہیں ہیں۔ترجمان نے بتایا کہ طالبان نے34افراد پر مشتمل گرینڈ وفد تشکیل دیا ہے جس میں افغانستان کے تمام صوبوں سے ایک ایک نمائندہ لیا گیا ہے۔

طالبان ترجمان نے بتایا کہ وفد کابل انتظامیہ کی جانب سے رہا کیے جانے والے تمام قیدیوں کی تصدیق کرے گاجس کے بعد مزید پیش رفت ہوگی۔قبل ازیں افغان طالبان کے ترجمان سہیل شاہین نے کہا تھا کہ صرف ہزاریا ڈیڑھ ہزار قیدیوں کی رہائی قابل قبول نہیں اور 5 ہزار قیدیوں کی رہائی کےبعد ہی بین الافغان مذاکرات ممکن ہوں گے۔

مزید : بین الاقوامی