کورونا وائرس کے شکاربرازیل کے اعلیٰ عہدیدارکی ٹرمپ سے ملاقات،امریکی صدر اب کیا کرنے جارہے ہیں؟َفیصلہ سنادیا

کورونا وائرس کے شکاربرازیل کے اعلیٰ عہدیدارکی ٹرمپ سے ملاقات،امریکی صدر اب ...
کورونا وائرس کے شکاربرازیل کے اعلیٰ عہدیدارکی ٹرمپ سے ملاقات،امریکی صدر اب کیا کرنے جارہے ہیں؟َفیصلہ سنادیا

  



واشنگٹن(ڈیلی پاکستان آن لائن)امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ نے اپنا کورونا وائرس کا ٹیسٹ کرانے کاارادہ ظاہر کردیا۔امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ وہ بھی اپنا کرونا وائرس کا ٹیسٹ کرائیں گے۔ صدر ٹرمپ کچھ روز قبل ایک برازیلین عہدے دار کے ساتھ کھڑے ہوئے تھے جن میں کرونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔

خبر رساں ادارے 'رائٹرز' کے مطابق صدر ٹرمپ نے حال ہی میں ریاست فلوریڈا کے ایک نجی کلب میں برازیلین صدر کے پریس سیکریٹری فابیو وائنگارٹین کے ساتھ تصویر کھنچوائی تھی۔ فابیو وائن گارٹین میں بعد ازاں کرونا وائرس کی تشخیص ہوئی تھی۔

صدر ٹرمپ اس سے قبل متعدد مرتبہ کہہ چکے ہیں کہ وہ کرونا وائرس کا ٹیسٹ کرانے کا ارادہ نہیں رکھتے اور نہ ہی ان کا خود کو قرنطینہ میں رکھنے کا ارادہ ہے۔ صدر ٹرمپ لوگوں سے ہاتھ ملانے سے بھی گریز نہیں کر رہے تھے۔

وائٹ ہاوس کے روز گارڈن میں پریس کانفرنس کے دوران ایک صحافی نے ان سے سوال کیا کہ یورپ سے آنے والے امریکیوں کو قرنطینہ میں رہنے کی ہدایات دی گئی ہیں۔ لیکن صدر ٹرمپ تصاویر میں ایک ایسے شخص کے ساتھ موجود تھے جن میں کرونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔ یہ کیسے مختلف ہے؟صدر ٹرمپ نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ میں کہیں باہر سے نہیں آیا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ میں نے ان کے ساتھ ایک تصویر لی اور میں صرف چند سیکنڈز کیلئے ان کے ساتھ کھڑا ہوا تھا۔ مجھے نہیں معلوم وہ کون تھے۔

امریکی صدر کا کہنا تھا انہوں نے برازیل کے صدر کے ساتھ وقت گزارا۔ ان کے بقول "میں ان کے ساتھ دو گھنٹے تک بیٹھا رہا تھا۔ لیکن ان کا کرونا وائرس کا ٹیسٹ منفی آیا ہے جو بہت اچھا ہے۔"

ایک اور صحافی نے سوال کیا کہ محکمہ صحت کے حکام ان افرادکو آئسولیشن میں رہنے کی ہدایات کر رہے ہیں جو کسی کرونا وائرس کے مریض سے ملے ہوں۔ٹرمپ نے جواباً کہا کہ وائٹ ہاوس کے ڈاکٹروں نے انہیں ایسی کوئی ہدایات نہیں دیں۔صدر ٹرمپ کا مزید کہنا تھاکہ "میں نے یہ نہیں کہاکہ میں اپنا ٹیسٹ کرانے نہیں جاوں گا۔"صحافی نے سوال کیا کہ کیا آپ جائیں گے؟امریکی صدر نے جواب دیا کہ ہو سکتا ہے کہ میں جاوں اور شاید نہ بھی جاوں۔ لیکن میں سمجھتا ہوں کہ میں اپنا ٹیسٹ کراوں گا۔

مزید : بین الاقوامی