اتر پردیش، با حجاب طالبات کے کالج میں داخلے پر پابندی، زبردستی برقعے اتروا دیئے 

اتر پردیش، با حجاب طالبات کے کالج میں داخلے پر پابندی، زبردستی برقعے اتروا ...

  

علی گڑھ (آئی این پی)بھارت کے ایک اور کالج نے باحجاب مسلمان طالبات کو کالج میں داخلے سے روک دیا، مسلم لڑکیوں سے کالج کے دروازے پر ہی برقع اتروایا جارہا ہے۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق بھارتی ریاست اتر پردیش میں دھرم سماج کالج کے بعد ضلع علی گڑھ کے شری وارشنے کالج نے بھی باحجاب طالبات کو کالج میں داخل ہونے سے روک دیا ہے۔کالج کے پرنسپل نے حجاب کیساتھ داخل نہ ہونے کا باقاعدہ نوٹس بھی کالج کے گیٹ پر چسپاں کردیا ہے۔کالج پرنسپل کی جانب سے سبھی طلبہ و طالبات کو کالج کے ڈریس کوڈ میں ہی آنے کے لیے کہا گیا نیز طلبہ کو چہرا ڈھک کر کالج میں داخل ہونے کی اجازت نہیں دی جا رہی ہے۔بھارتی میڈیا کا کہنا ہے کہ مسلمان طالباب حجاب پہننے پر ہندو طالب علموں نے بھگوا رنگ کا مفلر پہننے کا کہا اور مسلمان طالبات ہندو طالبعلموں میں لفظی تکرار بھی ہوئی جس کے بعد پرنسپل نے ڈریس کوڈ پر عمل برآمد کو لازمی قرار دیا۔نوٹس کے مطابق کسی بھی طالبہ کو چہرا ڈھک کر کالج میں داخل ہونیکی اجازت نہیں ہے۔ نوٹس لگانے کا مقصد صرف کالج کے ڈریس کوڈ کی یاد دہانی کرانا ہے سب طالبات کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ ڈریس کوڈ پر عمل کریں، اگر کوئی طالبہ چہرہ ڈھانپ کر آتی ہے تو اسے دروازے سے ہی واپس کردیا جائے گا۔

اترپردیش کالج

مزید :

صفحہ آخر -