سیمنٹ قیمتوں میں اضافہ‘ تعمیراتی کام متاثر‘ بجری‘ اینٹیں مزید مہنگی 

سیمنٹ قیمتوں میں اضافہ‘ تعمیراتی کام متاثر‘ بجری‘ اینٹیں مزید مہنگی 

  

کوٹ ادو(تحصیل رپورٹر)سیمنٹ کی قیمتوں میں مسلسل اضافے کا تسلسل جاری،ایک ماہ کے دوران سیمنٹ ساز کمپنیوں نے 200روپے سے 250 روپے فی بوری کی قیمت میں اضافہ کر دیا،ماہ رواں میں 130روپے کا اضافہ کیا گیا، مزید اضافے کا امکان،قیمت میں ہوشربا اضافے کے بعد اس شعبے سے وابستہ لاکھوں مزدور بے روزگار ہونے کا خدشہ  ہے، تفصیل کے مطابق سیمنٹ کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ نے تعمیرات سے وابستہ لوگوں کو پریشان رکے رکھ دیا ہے،رواں ماہ کے دوران 2باراضافہ کے بعد گزشتہ روز دوبارہ اضافہ کردیا گیا ہے جسکی وجہ سے سیمنٹ کی فی بوری 870سے880روپے میں فروخت کی جا رہی ہے،2ماہ قبل فروخت(بقیہ نمبر50صفحہ6پر)

 ہونے والی سیمنٹ کی بوری کی قیمت 650 روپے تھی.جو کہ اب مسلسل روزانہ کی بنیاد پر ہونے والے اضافے کے بعد 870روپے سے 880 روپے تک فروخت کی جا رہی ہے،سیمنٹ کی موجودہ قیمت پاکستان کی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی ہے،اگر سیمنٹ کی قیمتوں میں اضافے کا یہی تسلسل برقرار رہا تو سیمنٹ کی قیمت 1000 روپے فی بوری تک پہنچ سکتی ہے،دوسری جانب اسٹیل مصنوعات،بجری اور اینٹوں کی قیمتیں بھی آسمان سے باتیں کر رہی ہے.تعمیراتی ساز و سامان کی قیمتوں میں ہوشربا اضافے کے بعد اس شعبے سے وابستہ لاکھوں مزدور بے روزگار ہونے کا خدشہ ہے۔

سیمنٹ مہنگی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -