طلبہ یونینز ملک کو سیاسی لیڈر شپ فراہم کرنیکی نرسریاں‘ ذیشان اختر 

  طلبہ یونینز ملک کو سیاسی لیڈر شپ فراہم کرنیکی نرسریاں‘ ذیشان اختر 

  

بہاولپور(بیورو رپورٹ،ڈسٹرکٹ رپورٹر) نائب امیر جماعت اسلامی جنوبی پنجاب سید ذیشان اختر  نے کہا کہ ملک بھر میں طلبہ یونین پر لگائی گئی پابندیاں ختم کی جائیں۔ جامعات کے طلبہ ملک کو سیاسی لیڈرشپ مہیا کرنے کی نرسریاں ہیں۔ طلبہ یونینز پر پابندیاں ملک کو باشعور سیاسی قیادت سے دور رکھنے کی سازش ہے(بقیہ نمبر12صفحہ6پر)

۔ طلبہ یونینز، تعلیمی اداروں میں طلبہ و طالبات کے حقوق کی ضمانت ہیں۔ حکمران طبقاتی تعلیم نظام کو فروغ دے رہا ہے وہ اسلامی جمعیت طلبہ کے وفد سے بات چیت کر رہے تھے۔سید ذیشان اختر نے کہا کہ پی ٹی آئی نے دیگر وعدوں کی طرح ملک کو یکساں نظام تعلیم دینے کا وعدہ بھی پورا نہیں کیا۔ پی ٹی آئی کے دور میں فیسوں میں اضافہ ہوا، ایچ ای سی کے فنڈز روکے گئے اور میڈیکل سمیت دیگر شعبوں میں تعلیم کے دروازے غریبوں کیلئے بند ہو گئے۔ حکومت نے صحت اور تعلیم کے شعبوں کو برباد کیا۔ پی ٹی آئی کے دور میں مہنگائی، بے روزگاری کے ساتھ ساتھ اداروں میں بھی تباہی آئی۔ آئے روز ملک پستی کی جانب جا رہا ہے۔ حکمران اشرافیہ کے پاس ملک کو بحرانوں سے نکالنے کیلئے کوئی منصوبہ نہیں۔ فرسودہ نظام کو پرامن جمہوری طریقہ سے رخصت کرنا ہو گا۔ قوم ملک کو اسلامی فلاحی ریاست بنانے کیلئے  جماعت اسلامی پر اعتماد کرے اور آزمائے ہوئے لوگوں کو مزید مواقع نہ دے۔ جماعت اسلامی طلبہ یونینز بحال کرے گی، طبقاتی نظام تعلیم کا خاتمہ کرکے ملک کو جدید اسلامی نظام تعلیم دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی زرعی گریجوایٹس اور ڈپلومہ ہولڈرز کو مفت زرعی زمین الاٹ کریگی۔

ذیشان اختر

مزید :

ملتان صفحہ آخر -