شام میں القاعدہ گروپ کی حمایت کا الزام، کویتی وزیر مستعفی

شام میں القاعدہ گروپ کی حمایت کا الزام، کویتی وزیر مستعفی

کویت سٹی (آن لائن)کویت کے وزیر عدل اور اسلامی امور نایف العجمی اپنے خلاف امریکا کے ایک سینیر عہدے دار کی جانب سے عائد کردہ دہشت گردی کی حمایت کے الزام کے بعد مستعفی ہو گئے ہیں۔امریکا کے محکمہ خزانہ کے انڈر سیکریٹری برائے انسداد دہشت گردی ڈیوڈ کوہن نے مارچ میں کویتی وزیر پر الزام عائد کیا تھا کہ انھوں نے شام میں جہاد کی بات کی تھی اور دہشت گردی کے لیے رقوم مہیا کرنے کی حمایت کی تھی لیکن نایف العجمی نے ان الزامات کو من گھڑت اور بے بنیاد قرار دے کر مسترد کردیا تھا۔اب انھوں نے ایک بیان میں کہا ہے کہ امیر کویت نے ان کا استعفیٰ منظور کر لیا ہے اور انھوں نے اس پر امیر کا شکریہ ادا کیا ہے۔انھوں نے ٹویٹر پر اپنے سرکاری اکاو¿نٹ پر بھی یہ بیان جاری کیا ہے۔گذشتہ ماہ کویتی میڈیا نے یہ اطلاع دی تھی کہ انھوں نے امیر کویت کو خرابیِ صحت کی بنا پر مستعفی ہونے کی پیش کش کی تھی۔واضح رہے کہ ڈیوڈ کوہن نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ نایف عجمی شام میں جہاد کے فروغ کی ایک تاریخ رکھتے ہیں اور ان کی تصاویر شام میں القاعدہ سے وابستہ جنگجو گروپ النصر محاذ کے لیے چندہ اکٹھا کرنے کی مہم کے پوسٹروں پر بھی آویزاں کی گئی ہیں۔

مزید : عالمی منظر


loading...