حالیہ سیزن میں ملکی تاریخ کی ریکارڈ53لاکھ ٹن سے زائد چینی حاصل

حالیہ سیزن میں ملکی تاریخ کی ریکارڈ53لاکھ ٹن سے زائد چینی حاصل

لاہور(کامرس رپورٹر)گنے کی کریشنگ کے حالیہ سیزن کے دوران ملکی تاریخ کی ریکارڈ 53 لاکھ 30 ہزار ٹن چینی کی پیداوار حاصل ہوئی ہے۔ پاکستان شوگر ملز ایسوسی ایشن ( پی ایس ایم اے) کے اعدادو شمار کے مطابق گذشتہ سال کے مقابلہ میں رواں سال کریشنگ سیزن کے دوران چینی کی پیداوار میں 6.07 فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔ رپورٹ کے مطابق رواں سال ملک میں چینی کی پیدوار ریکارڈ حد تک بڑھی ہے۔ کرشنگ سیزن کا آغاز نومبر 2013ء میں ہوا تھا جو اپریل 12014ء تک جاری رہا۔ پی ایس ایم اے کی رپورٹ کے مطابق رواں سال کریشنگ سیزن کے دوران 15 اپریل 2014ء تک 11لاکھ 30 ہزار ایکڑ رقبہ پر کاشت گنے سے 53 لاکھ 30 ہزار ٹن چینی کی پیداوار حاصل کی گئی ہے جبکہ سیزن کیلئے پی ا یس ایم اے نے 50 لاکھ ٹن چینی کی پیداوار کا ہدف مقرر کیا تھا۔ ملک میں چینی کی مقامی کھپت کا تخمینہ 45 لاکھ ٹن سالانہ ہے ۔ پی ایس ایم نے ملکی کھپت کیلئے 18کروڑ 43 لاکھ 50 ہزار افراد کی ملکی آبادی کیلئے سالانہ فی کس 24.6 کلو گرام چینی کی کھپت کا اندازہ لگایا جس کے تحت ملکی کھپت 45لاکھ ٹن سالانہ بنتی ہے۔رپورٹ کے مطابق گذشتہ سال کے کریشنگ سیزن میں 50 لاکھ 30 ہزار ٹن چینی کی پیداوار حاصل ہوئی تھی۔

چینی کی ملکی پیداوار میں رواں سال ہونے والے اضافے کا سبب بہترین موسمی حالات اور گذشتہ سیزن کے دوران کاشت کاروں کو گنے کی بہترین قیمتوں کی بروقت ادائیگی ہے جس کی وجہ سے کاشتکاروں نے گنے کے زیر کاشت رقبہ میں اضافہ کیا اور رواں سال گذشتہ سال کی نسبت میں چینی کی ملکی پیداوار میں 6 فیصد سے زائد کا حوصلہ افزاء اضافہ ہوا ہے جبکہ حاصل ہونے والی پیداوار چینی کی ملکی ضروریات کیلئے نہ صرف کافی ہوگی بلکہ چینی کی ملکی کھپت کو پورا کرنے کے بعد 8لاکھ 30 ہزار ٹن زائد چینی دستیاب ہوگی جس کی برآمد سے قیمتی زر مبادلہ کما کر ملکی معیشت کے استحکام میں بھی مدد حاصل کی جا سکتی ہے۔

مزید : کامرس


loading...