ڈی آئی جی کے حکم پر پولیس اہلکاروں کیخلاف مقدمہ درج کر لیاگیا

ڈی آئی جی کے حکم پر پولیس اہلکاروں کیخلاف مقدمہ درج کر لیاگیا

لاہور(انوسٹی گیشن سیل) ڈی آئی جی کے حکم پر غفلت کے مرتکب پولیس اہلکاروں کیخلاف تھانہ شاہدرہ ٹاو¿ن میںمقدمہ درج کر لیاگیا،مقدمہ ایس ایچ او شاہدرہ ٹاو¿ن شاہد علی کی مدعیت میں درج کیا گیا ، قبضہ مافیا اور جعلسازوں کیخلاف درج مقدمہ خارج کرنے پر سائل فتخارعلی کی درخواست پر ڈی آئی جی نے مقدمہ نمبر 317/14 کی مثل منگوائی جو تفتیشی افسرحاجی مختاراحمد نے غائب کر دی جبکہ پولیس نے مقدمے میں کسی اہلکار کو نامزد نہیں کیا۔تفصیلات کے مطابق کالاخطائی روڈ جمیل پارک کے رہائشی افتخار علی کی قبضہ مافیا اور جعلسازوں کیخلاف درخواست پر تھانہ شاہدرہ ٹاو¿ن میں بلال یونس سمیت 8افراد کیخلاف مقدمہ نمبر418/11اور478/11 درج کیاگیا جس کے تفتیشی افسر سب انسپکٹر حاجی مختار احمد مقرر ہوئے اور بعد ازاں خارج کر دیا ۔جس پر سائل نے سی سی پی او لاہور کو درخواست کی کہ مقدمے کی شفاف تحقیقات کی جائیں ۔چوہدری شفیق گجرنے معاملہ ڈی آئی جی کو ریفر کر دیا جس پر ڈی آئی جی نے تھانہ شاہدرہ کی پولیس کو مثل پیش کرنے کا حکم دیا جو نہ کی گئی جس پر ڈی آئی جی نے غفلت کے مرتکب پولیس اہلکاروں کیخلاف مقدمہ درج کرنے کا حکم دیا جو کہ ایس ایچ او کی مدعیت میں درج کر لیا گیا۔اڈی آئی جی نے کیس کی تفتیش کےلئے محکمہ اینٹی کرپشن کو ریفر کیا تاکہ صیح تحقیقات کر کے اصل ملزموں کیخلاف کاروائی کی جائے جس پر سائل افتخار علی کا کہنا ہے کہ اینٹی کرپشن کی طرف سے کوئی تاریخ نہیں دی اور اعلیٰ حکام سے اپیل کی ہے کہ ملزمان کیخلاف کارروائی عمل میں لاتے ہوئے انصاف فراہم کےا جائے۔

مزید : علاقائی


loading...