ہنگو فائرنگ سے دو اساتذہ جاں بحق پشاور سے 2 بوری بن لاشیں بر آمد

ہنگو فائرنگ سے دو اساتذہ جاں بحق پشاور سے 2 بوری بن لاشیں بر آمد

                                     ہنگو/پشاور(اے این این)خیبر پختون خواہ میں مبینہ دہشتگردوں کی فائرنگ سے دو اساتذہ جاں بحق،2بوری بند لاشیں برآمد۔تفصیلات کے مطابق منگل کی صبح ہنگو شہر میں گورنمنٹ ہائی سکول نمبر ایک گل باغ کے دو اساتذہ منگل کی صبح ساڑھے سات بجے سکول آرہے تھے کہ اس دوران راستے میں تاک لگائے بیٹھے حملہ آور نے ان پر فائرنگ کردی۔جس کے نتیجے میں دو اساتذہ شمیم بادشاہ اور لیاقت علی شدید زخمی ہو گئے جنھیں فوری طور پر ڈسٹرکٹ ہسپتال ہنگو منتقل کیا گیا تاہم وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے د م توڑ گئے۔حملہ آور فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے ۔واقعہ کے بعد سکول کے طلباءاساتذہ اور اہل علاقہ نے شدید احتجاج کیا اور روڈ ہر قسم کی ٹریفک کے لئے بند کر دی جو بعد میں کھول دی گئی۔مظاہرین نے قاتلوں کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کیا ہے جبکہ پولیس نے نامعلوم افراد کے خلاف مقدمہ رج کر کے تفتیش شروع کر دی ہے۔علاقہ کے معززین نے واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے اور طلباءو اساتذہ کو تحفظ فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔دریں اثناءپشاور کے علاقے حیات آباد کے برساتی نالے سے خاتون سمیت دو افراد کی بوری بند لاشیں ملی ہیں۔دونوں افراد کو تشدد کر کے مارا گیا ہے ۔پولیس کے مطابق خاتون کی عمر30سال اور نوجوان کی عمر18سال کے قریب ہے۔ پولیس نے لاشیں تحویل میں لے کر پوسٹ مارٹم کیلئے منتقل کردی ہیں۔ مقتولین کی شناخت نہیں ہوسکی اور ان کے لواحقین کی تلاش شروع کر دی گئی ہے۔

 اساتذہ جاں بحق

 

مزید : علاقائی


loading...